Circle Image

پیرعتیق الرحمن

@7150

Peer atiq ur rehman

ماں باپ اگر راضی ہیں جنت میں چلے گا
ناراض ہیں گر دونوں تو دوزخ میں جلے گا
گر خوش نہ ہو نے تجھ سے حیاتی میں یہ دونوں
دنیا سے تو بے دین بے ایمان مرے گا
اللہ بھی دیکھے گا اسے اپنے غضب سے
ماں باپ کو ملتے ہوئے تیوڑ جو چڑھے گا

0
10
مبارک مرحبا ہے نور کی برسات سہرے میں
حسیں کیا خوب ہے حسنین کی بارات سہرے میں
وحیدے حق کے فرزندو خدا کا فضل ہو تم پر
سدا خوشیوں میں گزریں آپ کے دن رات سہرے میں
رضا حامد تمہارے باپ ہیں چچا ہیں محسن ہیں
انہیں کے دم سے پر رونق ہے یہ بارات سہرے میں

7
نبی کا نام میں اپنی زباں پر جب بھی لاتا ہوں
دلِ بے چین میں واللہ بڑی تسکین پا تا ہوں
غم و دکھ کے اندھیروں سے رہائی ملتی ہے مجھ کو
جبیں جب میں ِرسولِ پاک کے در پر جھکاتا ہوں
تصور میں پہنچ کر مصطفی کے پاک قدموں میں
زباں سے یا محمد یا محمد گنگنا تا ہوں

57
اے رحمت عالم فخرے جہاں ثانی ترے رتبے کا ہے کہاں
خالق نے تمہاری خاطر ہی تخلیق کئے ہیں یہ کون و مکاں
پیدا ترے قد کا نہ سایہ کیا تجھ پر بھی کسی کا نہ سایہ کیا
ہیں ترے ہی زیر ے سایہ مگر یہ زمین و زماں یہ مکین و مکاں
ترے آ نے کو رب برہان کہے مومن پہ کیا احسان کہے
تجھے نور خدا قرآن کہے ترا نور ہے شمس و قمر میں عیاں

0
49
لجپال مرے آقا دیدار کرا جائیں
بگڑی ہوئی قسمت کو سرکار بنا جائیں
توصیف و ثنا تیری ہر دم ہی رہے لب پر
اے امی نبی مجھ کو وہ علم پڑھا جائیں
نیکی نہیں کچھ پلے لتھڑا ہو گناہوں میں
سنت کی بہاروں سے مجھے آپ سجا جائیں

0
42
چمکا یہ جہاں سارا تیرے ہی اجالوں سے
بالا ہے ترا رتبہ مرے من کے خیالوں سے
کثرت سے دیا تجھ کو خالق نے مرے آقا
کہتا ہوں میں یہ واللہ قرآنی حوالوں سے
تجھ پر ہے ختم آقا نعمت بھی نبوت بھی
ہے ذات تری بالا دنیا کی مثالوں سے

0
1
43
لجپال مرے آقا دیدار کرا جائیں
بگڑی ہوئی قسمت کو سرکار بنا جائیں
توصیف و ثنا تیری ہر دم ہی رہے لب پر
اے امی نبی مجھ کو وہ علم پڑھا جائیں
نیکی نہیں کچھ پلے لتھڑا ہو گناہوں میں
سنت کی بہاروں سے مجھے آپ سجا جائیں

1
29
یاد میں انکی جو رو کر دن گزا را کرتے ہیں
شب وہ ان کی دید میں واللہ گزارا کرتے ہیں
آج تک خالی نہ لوٹا کوئی بھی دربار سے
ان کے آگے جو بھی دامن کو پسارا کرتے ہیں
عشق صادق جو رسولِ مکی مد نی سے کرے
ان کے بگڑے کام آقا خود سدھارا کرتے ہیں

82
سوالی بن کرنبی کے در پر غریب اور خستہ حال آیا
خدا کی رحمت سے خالی دامن میں بھر کے مال و منال آیا
مرے جو بگڑے تھے کام سارے ہوے ہیں بہتر ترے ہی صدقے
دعا میں تیرا اے میرے آقا مجھے تو جب بھی خیال آیا
پو چھیں گے محشر میں اہل محشر مرے نبی کے غلاموں سے یہ
تمہارے چہروں پہ آج اتنا کہاں سے نور و جمال آیا

39
الله الله خدا دا حبیب آگیا
بن کے سارے جہاں دا طبیب آگیا
حکمتیں مل گئیں ظلمتیں مٹ گئیں
لے کے قرآں حبیب و لبیب آگیا
کل جہاناں دے لی رحمتاں بن کے تے
انبیا دا او کامل منیب آگیا

0
17
الله الله خدا دا حبیب آگیا
بن کے سارے جہاں دا طبیب آگیا
حکمتیں مل گئیں ظلمتیں مٹ گئیں
لے کے قرآں حبیب و لبیب آگیا
کل جہاناں دے لی رحمتاں بن کے تے
انبیا دا او کامل منیب آگیا

0
16
مرے تے کرم آقا دا بے بہا اے
میں جو کجھ بھی ہاں اے نبی دی عطا اے
او سلطان سارے زمانے دا ہویا
مدینے دے سلطان دا جو گدا اے
نزع قبر قامت دی سختی توں بچیا
را ضی جیدے تے نبی مصطفی اے

0
55
نبی کے عشق میں ہم کو تڑپ نا کام آئے گا
کسی دن تو غلاموں میں ہمارا نام آئے گا
محبت میں انہیں ہم جو ہمیشہ یاد کرتے ہیں
کبھی تو ان کی جانب سے ہمیں پیغام آئے گا
میں کھوٹا ہی سہی بے شک مگر کھوٹا بھی اصلی ہوں
لگانے کے لیے کوئی تو میرا دام آئے گا

0
55
عیب دُھل جائیں آنسو نکلتے رہیں
دل میں ہو فِکر روزِ جزا کی مجھے
اے عتیق اِس طرح گُزرے باقی عُمر
یاد ہر پَل رے کربلا کی مجھے

0
28
دلوں کا چین ہیں مد نی مٹھن من ٹھار کی باتیں
نبی مختار کی باتیں خدا کے یارکی باتیں
خدا شاہد مجھے اچھے وہ لگتے ہیں جو لکھتے ہیں
مدینے کے گلی کوچوں کی اور دربار کی باتیں
عداوت کو محبت میں بدلنے والے آقا کی
کرو اس پیارے مد نی کے اسی کردار کی باتیں

1
17
دلوں کا چین ہیں مد نی مٹھن من ٹھار کی باتیں
نبی مختار کی باتیں خدا کے یارکی باتیں
خدا شاہد مجھے اچھے وہ لگتے ہیں جو لکھتے ہیں
مدینے کے گلی کوچوں کی اور دربار کی باتیں
عداوت کو محبت میں بدلنے والے آقا کی
کرو اس پیارے مد نی کے اسی کردار کی باتیں

0
18
دلوں کا چین ہیں مد نی مٹھن من ٹھار کی باتیں
نبی مختار کی باتیں خدا کے یارکی باتیں
خدا شاہد مجھے اچھے وہ لگتے ہیں جو لکھتے ہیں
مدینے کے گلی کوچوں کی اور دربار کی باتیں
عداوت کو محبت میں بدلنے والے آقا کی
کرو اس پیارے مد نی کے اسی کردار کی باتیں

0
41
محمد ہمارے بڑے محترم ہیں
وہ صاحِ بِ جود و کرم ہی کرم ہیں
نہیں بھولے آقا ہمیں لا مکاں پر
ہمارا وہ ہر آن رکھتے بھرم ہیں
سیا کارو آاو میں دامن میں لے لوں
ندا یہ لگاتے نبی ئے حرم ہیں

0
34
نعتِ احمد میں کہوں شوقِ سُخن آہی گیا
بُلبُلِ نغمہ سرا کا وہ چمن آہی گیا
مانتا ہوں کہ مرا نغمہ یہ کامل تو نہیں
خوش نوا خوب نہیں بانکپن آہی گیا
اُن کی یاد آتے ہی چہرے پہ ہے رونق آئی
اُجڑے آنگن میں مرے لعلِ سمن آہی گیا

1
36
نعت احمد میں کہوں شوق سخن آہی گیا
بلبلے نغمہ سرا کاوہ چمن آہی گیا
ہاں یہ سچ ہے نہیں پرسوز ترانہ میرا
خوش نوا خوشتر نہ سہی با نک پن آہی گیا
ان کی یا د آتے ہی چہرے پہ جو رونق آئی
اجڑے گھر میں مرے لعلے سمن آہی گیا

0
33
نبی جی کی نعتیں سناتے رہیں گے
ہاں گیت انکی الفت کے گاتے رہیں گے
ذکر انکی رحمت کا ہر دم سنا کر
ہاں بات اپنی بگڑی بنا تے رہیں گے
شفاعت کی پیاری حدیثیں سناکر
امید عاصیوں کو دلا تے رہیں گے

0
33
رسول الله کی سنت سے مجھے بھی پیار ہو جائے
مرا دل چوکھٹ محبوب پر نثار ہو جائے
خدا کردے عطا مجھ کو محمد کی ثنا گوئی
ثنا خوان محمد میں مرا شومار ہو جائے
محبت کی کلی دل کی زمیں میں کاش کھل جائے
مرا گلشن خزاں رسیدہ پر بہار ہو جائے

0
29
لگا عشق مُصطفٰیؑ کا اے دل بیمار ہو جا
پی کر شرابِ عشقی اور بادہ خوار ہو جا
سن لے گی رحمتِ حق بڑھکر تری دعائیں
مولا سے مانگتے ہوے تو اشک بار ہوجا
واللہ برستے ہیں اُن کے کرم کے با دل
اُنکے کرم کاتو بھی طالب اے یار ہوجا

0
93
عشق۔ نبی۔ میں خود کو۔ تڑ پانا سیکھ لے
اس دا ستان۔ عشق۔ کا افسانہ سیکھ لے
نظروں میں رکھ تو اپنے۔ پیارے سجن کارخ
رخ دل ربا پہ خود کو مٹانا۔۔ سیکھ لے
مجنوں۔ کہے۔ کوئی۔ تجھے رانجھا کوئی کہے
زلیخا۔ سے۔ اپنا یو سف منا نا سیکھ لے

37
بے مثل بے نظیر شہادت حسین کی
خون رسول پاک ہے طینت حسین کی
دیکھو حسین راکب دوش رسول ہے
آقا کی بار گاہ میں یہ عزت حسین کی
جن کی غذا لعاب زبان رسول ہے
نوری غذا ہے نور ہی عترت حسین کی

0
47
نام حسین لا یا آقا کی بارگاہ میں
عتیق مصطفی نے سب غم مٹا دئیے ہیں

0
56
عشق حسین ساری عبادت کا نور ہے
ذکر حسین قلب کا چین و سرور ہے
کہتا ہے خارجی یہ کہ حق پر یذید تھا
ایسا عقیدا رکھناسراپا فتور ہے
حرامی نسب ہیں آج بھی حامی یذید کے
بغض حسین ان کے دل کا ناسور ہے

0
46
ہر آن دل سے لیتا۔ ہے جو نام۔ پنج تن
ملتا ہے۔ ان کو بے بہا انعام پنج تن
داتا۔ بنا۔ ہے کوئی تو خواجہ کوئی بنا
جس کے بھی ہاتھ۔ آگیا ہے جام پنج تن
ڈٹ۔ جآو ظلم و جبر کے طوفان سامنے
آتا۔ ہے۔ کربلا سے۔ یہ پیغام پنج تن

3
98
مل گئی جن کو نبی کے پاک در کی روشنی
اُن کےروشن دل سے ہے روشن دَہرکی روشنی
۔۔۔۔۔۔
جن کی نظروں میں سما جائے مدینے کی گلی
ہیچ ہے پھر اُس نظر میں ہر نگر کی روشنی
۔۔۔۔۔۔

46
بڑی امید ہے آقا کے در پر ہم بھی جائیں گے
مقدر جا کے اس در پر کبھی ہم بھی بنائیں گے
مدینے جا کے ہم دیوانہ ور گھو میں گے گلیوں میں
برستی نوری کرنوں کا نظارہ ہم بھی پائیں گے
کبھی چومیں گے ممبر کو کبھی دیکھیں گے گنبد کو
کبھی روضے کی جالی کو نگا ہوں میں بسائیں گے

24
میرے پیارے محمد ترے نام کا
ورد ہی اسم اعظم ہے ہر کام کا
نعت سرور سجی جس کے لب پر رہے
ہے وہ بندہ جہاں میں بڑے کام کا
خلق کا مولا خالق کا بندہ کہوں
ہے یہی معنی اللہ کے پیغام کا

31
نعت کہتے ہوئے برسے ہیں عتیق آنسو مرے
آپ کا لطف۔ و کرم دل نے جو آتے دیکھا

1
40