Circle Image

Shahbaz Khalid

@Shahbaz_Khalid@

Shahbaz Khalid

راستہ دیکھتا رہا کوئی
کم نہ کر پایا. فاصلہ کوئی
عشق کرتا ہے منتخب عاشق
حسن کرتا ہے پھر خدا کوئی
گرتے گرتے سنھبل رہے ہیں ہم
آ رہی ہے ابھی دعا کوئی

0
6
راہ چلتے ہوئے جب یار پھسل جاتا ہوں
پھر دعا آتی ہے امّی کی سنبھل جاتا ہوں
جس کہانی کا میں ہوتا ہوں اضافی کردار
خود ہی میں ایسی کہانی سے نکل جاتا ہوں
اپنے زخموں کی نمائش نہیں ہوتی مجھ سے
خود تڑپتا ہوں میں روتا ہوں بہل جاتا ہوں

0
69
کوئی صورت نکال دے مولا
کام بگڑا سنبھال دے مولا
بحر عصیاں میں ہے مری کشتی
تو کرم سے نکال دے مولا
رکھ بچا کر حرام روزی سے
مجھ کو رزقِ حلال دے مولا

0
60
نہ جانے کس لئے رشتوں میں یہ تکرار چلتی ہے
ذرا سی بات پر اپنوں میں ہی تلوار چلتی ہے
غریبی عشق کا پودا لگانے ہی نہیں دیتی
اُدھر گلزار چلتا ہے اِدھر گلنار چلتی ہے
حکومت آپ کو کرنی ہے تو پھر جھوٹ ہی کہیے
میاں سچائی کہہ دینے سے کیا سرکار چلتی ہے؟

0
47
اسے کہنے میں یہ عرصہ لگے گا
وہ میرے ساتھ ہی اچھا لگے گا
مجھے تکلیف میں دیکھا اگر وہ
مرے سینے سے فوراً آ لگے گا
سبھی سے جی لگا رہتا ہے جس کا
اسے اک شخص سے دل کیا لگے گا

0
34
............................... غزل ................................
ایسی عزت مجھے نہ دی جائے
جس سے بے عزتی کی بو آئے
وہ اسے کھود کر نکالتے ہیں
ہم نے جس کو کبھی تھے دفنائے
وہ مرے سامنے نہیں ہوگا

0
22
مجھ کو سب سے برا سمجھ لیجیے
سب ہے میری خطا سمجھ لیجیے
جو ہے دل میں چھپا سمجھ لیجیے
جو نہ میں کہہ سکا سمجھ لیجیے
آپ کا مسکرا کے مل لینا
روح کی ہے غذا سمجھ لیجیے

0
161
میری ہستی کو اُجاگر نہیں ہونے دیتا
سب سے آگے یہ مقدر نہیں ہونے دیتا
باپ ہے تو مجھے رومال کی حاجت کیسی
میرے آنسو کو سمندر نہیں ہونے دیتا
سب کی چاہت ہے کہ ہو ملک میں خوشیاں لیکن
امن اس دیش میں لیڈر نہیں ہونے دیتا

0
51
درود سید عالم پہ جب پڑھا میں نے
عروج اپنی محبت کو دے دیا میں نے
ہزار غم پہ بھی افسردگی نہیں ولله
حضور آپ کا پایا ہے آسرا میں نے
نبی کا شہر ہو ماں باپ ہوں بہن بھائی
ہمیشہ رب سے یہی کی ہے بس دعا میں نے

0
38
ہائے افسوس کہ کیا ہوں ابھی اور کیسا ہوں
عمر سے خود کی میں کچھ اور بڑا لگتا ہوں
نہ مروت نا محبت نا کوئی لطف و وفا
میں اسی یار پہ سب اپنا لٹا بیٹھا ہوں
وہ مجھے کانچ کی گڑیا کی طرح لگتی ہے
میں اسے ہاتھ لگانے سے بھی ڈر جاتا ہوں

0
17
پرور دگار مجھ کو بھی ایسا نصیب ہو
آنکھوں کو میرے گنبدِ خضریٰ نصیب ہو
مجھ کو سلام دنیا کرے گی خلوص سے
گر آمنہ کے لال کا صدقہ نصیب ہو
جتنے غزل کے شعر کہے سب فضول ہے
نعتِ رسولِ پاک میں تمغہ نصیب ہو

0
31
زندہ رہنے کا انتظام کرو
خواب سب چھوڑو کوئی کام کرو
وقتِ بیداری آ گیا اٹّھو
خوابِ غفلت کو اب تمام کرو
کام ان کی دعائیں آئیں گی
اپنے بوڑھوں کا احترام کرو

0
35
ترا کردار کافر سا ہے کیا سجدہ ادا ہوگا
بھلائی تو نہیں کرتا ہے کیا تیرا بھلا ہوگا
خدا سے مانگتا کیا ہے ؟ خدا کو مانگ لے پیارے
خدا گر ہو گیا تیرا ہر اک ذرّہ ترا ہوگا
مزے لے لے کے تم ہم پر ہمیشہ ظلم کر تے ہو
اگر ہم مر گئے تو پھر تمہارے ساتھ کیا ہوگا

0
70
وہ میرے پاس جب کھڑے ہونگے
پھر بچھڑنے کے وسوسے ہونگے
دل کی دھڑکن کو جانچتے ہونگے
ہاتھ سینے پہ وہ دھرے ہونگے
ہم زمیں کے چمکتے تاروں کو
آسماں والے دیکھتے ہونگے

0
46
کسے خبر ہے کہ عمر اپنی یہ سوچنے میں گزر رہی ہے
میں یاد اس کو تو کر رہا ہوں وہ کیا مجھے یاد کر رہی ہے
تمہیں جو تلقین ہم کیے تھے وہ یاد ہے تو بتاؤ ہم کو
ہوا چلی تو تمہاری کیا زلف یار اب بھی بکھر رہی ہے
نہیں لگا کال جب تمہارا تو مجھ کو ایسا گمان آیا
تو میرا نمبر ملا رہی ہے تو فون مجھ کو ہی کر رہی ہے

0
36
یار نے بدنامیاں کی یار کی
بس یہی تو ریت ہے سنسار کی
آپ پہلے کامیابی پائیے
پھر امیدیں دیجیے گا پیار کی
بس دوا کافی نہیں ہے اس لئے
کچھ عیادت کیجیے بیمار کی

0
102
نا پوچھو تم یہ مجھ سے کہ مرا قبضہ کہاں تک ہے
تسلط ہے زمیں پر اور رسائی آسماں تک ہے
مری منزل ہے ملکوتی مرا رستہ ہے لاہوتی
مسافر ہوں کہاں کا اور سفر میرا کہاں تک ہے
کسے رازِ نہاں کا علم ہو یہ بس بیاں تک ہے
کلامِ حق ابھی محدود حدً ترجماں تک ہے

0
38
میں شہباز خالد کلکتوی عروض کے اس ویپ سائٹ سے کے تمام اراکین کو مبارک بادی دیتا ہوں انہوں نے صرف زبانی طور پر اردو کی خدمت کرنا کا دعوی نہیں کیا یقینی طور پر اردو کی بھر پور خدمت کر رہے ہیں اس ساٹٹ کی وجہ سے جو اردو زبان کے متعلم اور خاص کر کے شاعری سیکھنے کےخواہاں ہیں ان تمام محبان شاعری کو اس سے بہت مدد مل رہی اس میں اراکین نے عروض پر منبی کتابیں بھی ارسال کی ہوئی ہیں متعلمین ان کتابوں سے بھی استفادہ حاصل کر سکتے ہیں .... مجھے اس ایپ کے ذریعہ بہت کچھ علم لیاقت میں اضافہ کیا اور بھی اپنے سے بڑے علم والے حضرات کی تحریرں سے استفادہ کر رہا ہوں ....صمیم قلب سے ایک بار اور تمام اراکین کا شکریہ ادا کرتا ہوں اور دلی مبارک باد پیش کرتا ہوں

1
128
باپ خود تو سبھی کانٹوں میں رہا کرتے ہیں
اور پھولوں میں ہی بچوں کو بڑا کرتے ہیں
رات دن کیا ہے وہ ہر پل ہی ہماری خاطر
گردشیں وقت کا ہر ظلم سہا کرتے ہیں
آنکھ گر کوئی بھی بچے کو دِکھائے ان کے
جان پر کھیل کے وہ فرض ادا کرتے ہیں

0
86
ہمیں سب آزمائیں گے
مگر ہم مسکرائیں گے
بہت توڑے گئے ہیں ہم
یقیناً رب کو پائیں گے
وہ ہم کو چھوڑ جائے گا
ہم اس کو چھوڑ جائیں گے

0
145
زندگی سے دل لگا کر کس لئے پچھتائیں ہم
جان و دل ہوش و خرد سے آپ کے ہوجائیں ہم
ہے جھکانا سر کہاں اور ہے جھکانا دل کہاں
عشق کا جو جام پی لے کیا اسے سمجھائیں ہم
کیا سبب ہے اس کے ہو کر اس کے رستے پر نہیں
گل بنیں سب اور پھر چٹان سے ٹکرائیں ہم

0
126
نہ پوچھوں کہ دیوانے کیا کر رہے ہیں
محمد پہ سب کچھ فدا کر رہے ہیں
لبوں پر درودوں کی ڈالی سجا کر
بلاؤں کو قیدِ بلا کر رہے ہیں
وہ قرآنی صورت بسا کر دلوں میں
غمِ دل سبھی ہم رہا کر رہے ہیں

0
50
جو آگے بڑھنے سے ڈر گیا ہے
یقین مانو وہ مر گیا ہے
مرے خیالوں میں اب نہ ہوگا
وہ میرے دل سے اتر گیا ہے
جو ایک لمحہ محال سا تھا
گزارنا وہ گزر گیا ہے

0
129
میری حالت جیسی ہے
وہ بھی ویسے رہتی ہے
جس سے تس سے ہوتی ہے
یہ محبت اندھی ہے
میں بھی اچھا لڑکا ہوں
وہ بھی اچھی لڑکی ہے

0
108
اس ساحل کو وہ ساحل بتلاتا ہے
دریا کتنے راز بہا لے جاتا ہے
ابّو کی کمزوری اور گھر کے حالات
دیکھ کے یہ سب دل میرا گھبراتا ہے
یونہی بلندی مل جاتی ہے کیا یاروں
آدمی چھت پر سیڑھی چڑھ کے آتا ہے

0
25
میں کتاب عقل سے دور ہوں مجھے عشق والا نصاب دے
کوئی یار دے اسے پیار دے مجھے دل لگانے کا باب دے
جو ہوئے تھے پیدا اذاں ہوئی ہیں مرے تو جا کے ہوئی نماز
اے خدا تو اتنی ہی دیر کا بھلا کہہ رہا ہے حساب دے
یہ کرم ہے یا ہے ستم ترا یہی بندے ہیں ترے سوچتے
تجھے بھول جائیں عذاب دے تو جو یاد آئے ثواب دے

0
194
دکھ ہی ملتا ہے سدا یار کے لہجے سے مجھے
کاٹتا رہتا ہے لفظوں بھرے شیشے سے مجھے
اس کا ہر آن اسی واسطے سہہ جاتا ہوں
خوف آتا ہے بہت یار کے جگڑے سے مجھے
اے خدا قوتِ برداشت کو اعلٰی کر دے
توڑا جائے گا ابھی اور سلیقے سے مجھے

0
22
اب جو سہتے رہے! روداد ہی ہوجائیں گے
بھولی بسری ہوئے اک یاد ہی ہوجائیں گے
ہم دعا مانگتے فریاد ہی ہوجائیں گے
اب نہ سمجھیں گے تو برباد ہی ہوجائیں گے
اٹھ کے بتلا ؤ کہ اس قوم کی پہچان ہے کیا
روشن ہو جائے حقیقت میں مسلمان ہے کیا

0
48
قلندر بو علیؒ ہمت عطا کر حوصلہ دے دے
میں کب سے چل رہا ہوں میری منزل کا پتہ دے دے
مقدر کو جگا دے بو علیؒ اپنی عطا دے دے
مجھے بھی اپنی چوکھٹ کےگداگر میں جگہ دے دے
کرم ابنِ علیؓ کا کر عطائے فاطمہؓ دے دے
علیؓ کا سلسلہ دے دے نبیؐ کا راستہ دے دے

0
51
عجب ظاہر محبت یہ نگارِ بیخودی کیا ہے
ضروری ہے کہ ہو اظہار ورنہ دل لگی کیا ہے
ظفریابی محبت میں شکستہ ہو کے ملتی ہے
اگر دل عشق میں تڑپا نہیں تو عاشقی کیا ہے
مقدس عشق کرنے کی غرض سے آ ملا تجھ سے
سوائے عشق و الفت میرے آگے زندگی کیا ہے

0
90
تمہاری آواز میرے کانوں کی جستجو ہے
رہو تم آنکھوں میں روز میری یہ آرزو ہے
تمہیں خیالوں میں سوچ لینا ہی ہے عبادت
تمہیں محبت سے دیکھ لینا مرا وضو ہے
میں اس کو تلقین کررہا تھا کہ خوش رہو تم
وہ کہہ رہا تھا تمام غم کی وجہ ہی تو ہے

53
عشق میں خود کو مبتلا سمجھے
تیری یادوں کو ہم دوا سمجھے
میں گناہوں میں چور رہتا ہوں
مسئلہ پر مرا ، خدا سمجھے
جس پہ ہو دید کا نشا تاری
وہ عذاب و ثواب کیا سمجھے

0
101