Circle Image

Uzma Ejaz

@Uzmazahra110

در جلانے کی جسارت جس نے کی ہے فاطمہؑ
زندگی لعنت ذدہ اس کی ہوئی ہے فاطمہؑ
در بدر ہو جائے دنیا حکم ہو گر آپ کا
آپ کی مرضی ہی عرشوں پر چلی ہے فاطمؑہ
بے شبہ مخلوق کو اللہ ہی دیتا ہے مگر
کبریا کے حکم سے پر بانٹی ہے فاطمہؑ

0
24
عجب رخ ہیں بدلے ہوئے سے ہوا کے
گڑے جا رہے ہیں جو پنجے وبا کے
رہوایسے لوگو سے دامن بچا کے
رکھیں آستیں میں جو خنجر چُھپاکے
خطائیں ہوئیں ہیں نہ جانے کہاں پر
کہ گونگے ہوئے لفظ سارے دعا کے

0
22
جب تری یاد گھیر لیتی ہے
با خدا سانس روک دیتی ہے
رت بہاروں کی کھو گئی ہم سے
زندگی ہے اداس رہتی ہے
کھڑکیاں اب کبھی نہیں کھلتیں
روشنی بے قرار رہتی ہے

0
29
خاک سے خواب ہم اٹھا لائے
درد دل سے بھی ہم چھپا لائے
کیا کوئی زندگی کو سمجھائے
کوئی اب اور کیا نیا لائے
خواب پھر خواب تھے !سو ٹوٹ گئے
دل مگر کیسے حوصلہ لائے

0
35
تعلق دل سے ٹوٹا دل لگی کا
تماشہ دیکھنا اب زندگی کا
سلیقہ ہی نہیں ہے زندگی کا
کرے شکوہ بھلا پھر کیوں کسی کا
کہاں ہم نے نبھائے عہد کوئی
اسے الزام کیوں دے بے رخی کا

0
17
شور تنہائیاں مچاتی ہیں
صفِ ماتم بچھائی حَسرت نے
اب وہ آئے نہ دیکھے مڑ کر بھی
زاویے بدلے میری قسمت نے
عُظمیٰ اعجاز

0
23
نوکِ نیزہ سے زرا مجھ کو بلانا باباؑ
دیکھ لے کیا ہے سکینؑہ یہ زمانا باباؑ
خوں مسلسل مرے کانوں سے ہے جاری باباؑ
ایسے ظالم نے مری کھینچی ہے بالی بابؑا
اپنے سینے سے مجھے آکے لگانا بابؑا
رسیاں باندھ کے لائے گئے بازاروں میں

0
37
اے ربابِؑ خستہ دل اے بے زباں اصغر کی ماں
بے خطا مارا ترا تشنہ دہاں اصغرؑ کی ماں
پیاس کچھ ایسے بجھائی ہے ترے بے شیر نے
بازوں شبیرؑ پروہ نیم جاں اصغرؑ کی ماں
نوکِ نیزہ پر سرِ اصغر نظر آیا تھا جب
تب سے لے کر اب تلک گریہ کناں اصغؑر کی ماں

0
40
دل کو بس نامِ سکینہؑ سے تسلی آئے
اس محبت میں کمی اب نہ الٰہی آئے
خود سے لپٹائے سکینہؑ کو پھپھیؑ سوچتی ہے
کوئی زنداں کے اندھیروں میں کرن ہی آئے
بیٹھ جاتے ہیں جگر تھام کے تنہائی میں
جب کبھی یاد سکینہؑ کی غریبی آئے

0
105
مـــــحوِ ثنا ہــــوا ہے مـــــرا دل پــھر آج یــوں
لگتا ہے مـــــجھ کو زینبِ کـــبریٰؑ نـــے دی دعا
آنکھوں میں اور خواب کوئی آئے بھی تو کیوں
رہتی ہے صــــبح شــام جو آنکھوں میں کربـلا
خواہش ترے فـــــقیر کی مــــولا ہـے بس یــہی
آئــــے تمــــہارے روضے سے میرے لئـــے صـــدا

0
79
دنیا میں کون آپؑ کے جیسا ہے فاطمہؑ
نورِ خدا کا آپؑ میں جلوہ ہے فاطمہؑ
اس کو بھلا زمانے کے سود و ذیاں سے کیا
جس کو بھی تیرے نام سے ملتا ہے فاطمہؑ
کوئی بھلا کہاں تری عظمت سمجھ سکا
تیرے لئے رسولؐ بھی اٹھتا ہے فاطمہؑ

0
94
میں زندہ ہوں کہ دل میں میرے حیدرؑ کی محبت ہے
مری بخشش کی ضامن بے شـــــــبہ یہ ہی ولایت ہے
سفینہ نوح کا ان کے سبب پہنچا کنارے پر
کہ خود اللہ نے ان کو عطا کی یہ کرامت ہے
نصیری کا بھی کوئی دوش نہ کوئی قصور ان کا
کہ نورِ کبریا کی مرتضیٰؑ میں جاہ و حشمت ہے

0
47
کوئی جذبہ بھی اب نہیں زندہ
جان لو تم بھی اب کہ اس دل میں
کوئی جذبہ بھی اب نہیں زندہ
صرف اس دل کے مردہ خانے میں
ہر طرف ماتمی صفیں ہیں بچھی
کوئی جذبہ بھی اب نہیں زندہ

0
37
خواب آنکھوں کا کربلا کی زمیں
عمر گزرے مری تمام وہیں
آکے دنیا میں بس یہ جانا ہے
گر غمِ شہؑ نہیں تو کچھ بھی نہیں

0
45
بسم اللّٰه الرحمٰن الرحیم
*رہا زندانِ غم سے ہو کے عابد کـــربلا آئـــے*
*مگر سینے پہ اک صدمہ یتیمہ کا اُٹھا آئــے*
*کسی صورت دلِ عابدؑ نہیں پاتا قرار اب تو*
*کہ مجمع شامیوں کا اور زینبؑ بے ردا آئـــے*
*تسلی دےنہیں سکتاکوئی اس غم کےمارےکو*

74
کیا عداوت تھی محمدؐ کے گھرانے سے انہیں
چین نہ آیا ہے گھر کو بھی جلانے سے انہیں
رسیاں باندھی گئیں حیدرؑ کو بیعت کے لئے
جھوٹ کہتی ہو! ہاں یہ زہراؑ نے طعنے بھی سنے
شرم نا آئی حدیثیں بھی سنانے سے انہیں
فاطمہ زہراؑ ہے سردارِ جناںؑ کی والدہ

0
41
*آمؑـــــنہ! آپ کے لاڈلــے پر فدا*
*آسمانوں زمینوں کا مالک ہوا*
*اپنی پہچان کروانے کے واسطے*
*رب نے بیٹا ترا منتخب ہے کیا*
*نصرتِ مصطفیٰؑ تھی ضروری بہت*
*اس لئے تو ہوئے خلق مشکلکشا*

119
تمہارا ذکر بھی ہے اک عبادت یا محمدؐ!
تمہاری ہم پہ واجب ہے اطاعت یا محمدؐ!
ہمیں عصیان کے کالے اندھیرے چاٹ جاتے
نہ ہوتی گر تمہاری ہم پہ شفقت یا محمدؐ!
مرے بگڑے ہوئے سب کام بن جاتے ہیں فوراً
کروں اسمِ مبارک جو تلاوت "یا محمدؐ!"

45
حَمــــــدِ باری تعالیٰ
اے خُدائے پنجتنؑ اے مالکِ کون و مکاں
میں ثنا تیری کروں میری یہ حیثیت کہاں
واحد و یکتا فقط اک ذات تیری کبریا
لو نہ گر تجھ سے لگائیں تو بتا جائیں کہاں
یہ زمیں یہ آسماں اک منفرد تخلیق ہے

0
82
کرم ہم پر نہیں ہو جو تمہارا فاطمہ زہراؑ
تو پھر یہ زندگی ہے بس خسارا فاطمہ زہراؑ
اندھیرے ہی اندھیرے ہوتے پھر اپنے مقدر میں
تو کہتا ہر کوئی قسمت کا مارا فاطمہ زہراؑ
تمہارے قاتلوں کے گھر بھی آنا جانا ہو جس کا
وہ کیسے ہوگا پھر مخلص تمہارا فاطمہ زہراؑ

0
113
بسم اللّٰه الرحمٰن الرحیم
کعبـــے پہ علم دیں کا لــہرائے تو اچــــھا ہے
اے یوسفِ زھـرا (عج) تو اب آئے تو اچھا ہے
ذکرِ غمِ سرورؑ میں رونا ہے بجا لیکن
عرفانِ غمِ سرورؑ ہو جائے تو اچھا ہے
ہیں اشکِ رواں مرہم زخـــمِ دلِ زہراؑ کے

0
51
سب کچھ لٹا کے آئی وطن بنتِ فاطمہؑ
لائی ہے ساتھ رنج و محن بنتِ فاطمہؑ
جس بھائی پر فدا کئے دو لاڈلے پسر
اس کو ہی دے سکی نہ کفن بنتِ فاطمہؑ
قبرِ رسول ص پر ہوا ماتم وہ الاماں
کرنے لگی جو اُن سے سخن بنتِ فاطمہؑ

3
156
یا حسینؑ
جل گیا گلشن سرِ دشتِ بلا شبیرؑ کا
تشنہ لب کنبہ ہوا محوِ بکا شبیرؑ کا
گونجتی ہیں آج بھی تیری اذانیں اے خدا
کٹ گیا لیکن تہہِ خنجر گلا شبیرؑ کا
کھینچنے کو ہوں علی اکبرؑ کے سینے سے سناں

2
218
جب کیا شانوں کو مولا پر فدا عباسؑ نے
زانوئے شبیرؑ پہ سجدہ کیا عباسؑ نے
زرد چہرے دیکھ کر روتا رہا حیدؑر کا لالؑ
ضبط کی کردی تھی ایسی انتہا عباسؑ نے
یا الہی بنتِ زہراؑ کی ردا محفوظ ہو
جب گرے گھوڑے سے تو یہ کی دعا عباسؑ نے

0
74
قیامت سے پہلے قیامت ہوئی ہے
کہ سجدے میں حیدرؑ کو ضربت لگی ہے
نہیں ہوش جبریلؑ جیسے ملک کو
کہ زیرو زبر کیا عبادت ہوئی ہے
جہانوں کا رہبرﷺ بھی نوحہ کناں ہے
قیامت قیامت قیامت ہوئی ہے

164
خدائے پاک کی رحمت کی انتہا احمدْﷺ
کہ جس کا کوئی نہیں اس کا آسرا احمدﷺ
خدا کا نور لباسِ بشر میں اترا ہے
زمیں پہ نورِ خدا کا ہے سلسلہ احمدﷺ
تھا اک ہجوم لگا ہر طرف خداؤں کا
تو لائے واحد و یکتا کا پھر پتا احمدﷺ

54
کوئی مرتبہ ان کا سمجھے گا کیا
شعــــورِ بـــــشر سے ہیں وہ ماورا
وہ جس کے زمیں آسماں ہیں مطیع
وہ بنتِ رســــولِ خدا فاطمــــہؑ
اُٹھے جنکی تعظیم کو خود نبیﷺ
حــــجابِ الہٰـــی وہ نـــــورِ خــــدا

39
کــــیا قیـــــامت کی گھـــڑی ہے عصـــرِ عاشورہ کے بعد
آگ خیمــــوں میں لگــــی ہے ،عصـــــرِ عــــاشورہ کے بعد
شب ڈھلـــــے سب ســــو گئـــــے ہیں نوجوانانِ بتولؑ
پہــــرہ زینبؑ دے رہی ہے، عصــــرِ عاشــــورہ کے بعد
کـــــیوں نہـــیں لوٹـــے ہو اب تک آپ دریا سے چچاؑ
پیــــاس میــــری مــــر گئی ہے عصرِ عاشورہ کے بعد

80
اے حجتِ (عج) الہی گہر کائنات کے
ضامن ہیں آپ (عج) ہی تو ۱ نجات کے
ہم پر پہاڑ ٹوٹ پڑے مشکلات کے
اب چاروں طرف سائے فقط کالی رات کے
بن کر اندھیری رات میں روشن دلیل آ
اب انتظار اور نہیں کر طویل آ

0
70
سیدہ زینبِ کبریٰؑ کا قصیدہ لکھنا
کیا بھلا میں مری اوقات یہ میرا لکھنا
خلد کی دل میں تمنا جو تمہارے جاگے
حضرتِ زینبِ کبریٰؑ کو وسیلہ لکھنا
جس کے لہجے میں نظر آئے علی شیرِ خداؑ
اس کے خُطبوں سے جو ہونا ہے وہ حملہ ! لکھنا

4
400
عشقِ اہلِ بیتؑ کو دل میں بسانا چاہیئے
دل ہے گھر اللّٰه کا اس کو سجانا چاہیئے
جو علیؑ والے ہیں ان کا دل لبھانا چاہیٸے
ہاں جو ہیں کم ظرف ان کا دل جلانا چاہیئے
جس پہ ھو جائے عنایت حیدرِ کرارؑ کی
اپنی قسمت پر اسے تو مسکرانا چاہیئے

0
687
بسم اللّٰه الرحمٰن الرحیم
یا علیؑ مدد
〰️〰️〰️〰️〰️〰️〰️〰️〰️〰️〰️
*وردِ زباں ھے صبــــح و مسا یا عـــلؑی مــدد*
*لاکھـــــوں مصیبــــتوں کی دوا یا علیؑ مدد*
*سانسیں علیؑ کے نام سے جن کی اٹکتــی ھیں*

165
چمن میں صورتِ صد برگ و بار آیا ہے
بہار بن کے وہ جانِ بہار آیا ہے
شریعتوں کا اُٹھائے وہ بار آیا ہے
رسولِﷺ حق کے لہو کا وقار آیا ہے
کرے گا پھر سے جوتعمیر ایک اک روضہ
دلِ بتولؑ کا وہ غم گسار آیا ہے

40
*روٗٸـــے منافقت پہ تماچــــہ غــدیر ہے*
*بے غیـــرتوں کے واسطے صـــدمہ غدیر ہے*
*چہروں پہ جو نقاب تھے اُس دن الٹ گئے*
*ایسی ہی روٗنمائی کا قصہ غدیر ہے*
*عُظــــــمی زھراؔ*

0
63
*روٗئے منافقت پہ تماچــــہ غــدیر ہے*
*بے غیـــرتوں کے واسطے صـــدمہ غدیر ہے*
*چہروں پہ جو نقاب تھے اُس دن الٹ گئے*
*ایسی ہی روٗنمائی کا قصہ غدیر ہے*
*عُظــــــمی زھراؔ*

55
رن میں جانِ فاطمہؑ جب محوِ سجدہ تھا ہوا
خنجرِ ابنِ لعیں نے کی جفا کی انتہا
چیخ اُٹھے عرض و سما تھے انبیاؑ محوِ بقا
فاطمہؑ کا لاڈلا تشنہ دہن مارا گیا
کیا خطا تھی ظالموں زہراؑ کے نورِ عین کی
کاٹ دی خنجر سے گردن سیدِ کونینؑ کی

0
44
رن میں جانِ فاطمہؑ جب محوِ سجدہ تھا ہوا
خنجرِ ابنِ لعیں نے کی جفا کی انتہا
چیخ اُٹھے عرض و سما تھے انبیاؑ محوِ بقا
فاطمہؑ کا لاڈلا تشنہ دہن مارا گیا
کیا خطا تھی ظالموں زہراؑ کے نورِ عین کی
کاٹ دی خنجر سے گردن سیدِ کونینؑ کی

53