Circle Image

Muhammad Abid Jaffari

@MuhammadAbidJaffari786

ذوالفقار کا دشمن کو مزہ چکھانا ہے
منتظر کے آنے کا منتظر زمانہ ہے
جب امام آئیں گے حال دل سنانا ہے
قاتلانِ زہرا کا نام بھی بتانا ہے
جب ظہور ہو گا وعدہ وفا کریں گے ہم
عہد جو کیا تھا ہم نے اسے نبھانا ہے

0
3
مومنوں شعبان میں ہادی ہمارے آ گئے
فاطمہ کے صحن میں احمد کے پیارے آ گئے
اک محمد دو علی شعبان میں اترے مگر
ساتھ میں ہی فاطمہ کے گوشوارے آ گئے
قاسم و اکبر بھی غازی زینب و شبیر بھی
ہمسفر کربل کے ہیں اک ساتھ سارے آ گئے

0
2
جو بھی غازی کے در پہ جاتے ہیں
بخت اپنا جگا کے آتے ہیں
پاک غازی کے پاک روضے پر
عرش والے بھی سر جھکاتے ہیں
فرض اپنا سمجھ کے غازی کو
دینے ہم بھی سلامی آتے ہیں

0
3
خدا کا دین بچانے حسین نکلے ہیں
یزیدیت کو مٹانے حسین نکلے ہیں
ہے جس زمیں پہ نبی بھی گئے تو روتے تھے
اسی کو خلد بنانے حسین نکلے ہیں
نبی کی آل بھی گھر سے نکل پڑی ہے اب
کیا تھا عہد نبھانے حسین نکلے ہیں

0
1
جو بھی غازی کے در پہ جاتے ہیں
بخت اپنا جگا کے آتے ہیں
پاک غازی کے پاک روضے پر
عرش والے بھی سر جھکاتے ہیں
فرض اپنا سمجھ کے غازی کو
دینے ہم بھی سلامی آتے ہیں

0
9
رجب کی آج تیرہ ہے علی آیا علی آیا
جہاں میں اب سخی ابنِ سخی آیا علی آیا
"بنا دی حیدرِ کرار نے تقدیر کعبے کی"
خدا کے گھر خدا کا ہی ولی آیا علی آیا

0
18
ہمارے محمد پیارے محمد
بڑی شان والے ہمارے محمد
محمد تا قائم ہیں سارے محمد
خدا کو پیارے ہیں سارے محمد
بنی جس کے صدقے خدا کی خدائی
وہی آمنہ کے دلارے محمد

0
3
ہاں فلسطین بھی کشمیر بھی آباد رہے
عالمِ فانی میں ہر ملک ہی آزاد رہے
رب نے تو مذہبِ اسلام میں واضح ہی کہا
کہ یہ انسان یہاں امن کرے شاد رہے

0
4
خود کو دنیا میں معتبر دیکھا
زندگانی کو مختصر دیکھا
در سبھی میں نے بند دیکھے پر
صرف وا ایک رب کا در دیکھا
دارِ فانی میں چھوڑ کر سب کو
عشق بھی ہم نے ان سے کر دیکھا

0
8
وہی آقا وہی مولا مقدر جو بناتا ہے
نظامِ کل جہاں کو وہ اکیلا ہی چلاتا ہے
وہ مالک آسمانوں کا زمینوں کا بھی مالک ہے
ہیں مخلوقات جتنی بھی سبھی کا ہی وہ داتا ہے
پرندوں کا چرندوں کا درندوں کا سبھی کا ہی
ہے رازق وہ خدا سب کا غذا سب کو کھلاتا ہے

0
10
یہاں سب لوٹنے والے سخاوت کون کرتا ہے
ہیں سب مصروف دولت میں عبادت کون کرتا ہے
سبھی ظالم برابر ہیں مقابل میں نہیں کوئی
پجاری ہیں یہاں سب ہی بغاوت کون کرتا ہے
خدا کو بھول بیٹھے ہیں خدا کو ماننے والے
ہیں نافرمان خالق کے اطاعت کون کرتا ہے

7
سبھی ظالم سنبھل جاؤ کہ اب حق آنے والا ہے
سنو ظالم سروں کے بل تمہیں لٹکانے والا ہے
کیے تم نے مظالم جو اسی کا بدلہ لے گا وہ
یہ رتبہ شان شوکت سب سبھی کچھ جانے والا ہے
حکومت ظالمانہ جو بنا لی تم نے مغروری
یہ تخت و تاج آ کر حق اسے پلٹانے والا ہے

5
اب تو کہنے کو کچھ بچا ہی نہیں
بنت حوا میں اب وفا ہی نہیں
سر پہ اس نے رکھی ردا ہی نہیں
بے حجابی کی انتہا ہی نہیں
تنگ کپڑوں میں ہر جگہ پھرے وہ
کچھ بھی شرم و حیا رہا ہی نہیں

7
ابن آدم تم گنہ سب چھوڑ کر توبہ کرو
اب تو اپنا رب سے رشتہ جوڑ کر توبہ کرو
ہے اگر تم میں برائی تو سنو تم غور سے
جھوٹ غیبت حرص سے منہ موڑ کر توبہ کرو

6
پیغام مرا جا کر یثرب میں صبا دینا
اک عرض مری جا کر احمدؐ کو سنا دینا
لاحق ہے مرض مجھ کو روحانی و جسمانی
بیمار بہت ہوں میں اب آپ شفا دینا
دیدار کروں تیرا دل کی یہ تمنا ہے
میں کاش ترا روضہ دیکھوں یہ دعا دینا

13