Circle Image

Sabder123

@Sabder123

جس کا دل اُن سے وابستہ
ہوگیا ہے
جلوہ گر سامنے اُن کو ہوگیا ہے
ان سے عشق و محبّت ہے جن کو
جو بھی مانگا لیے سامنے اُن کے
شرق و غرب سے نظارے نظارے ہوگے

0
14
"نظم
"میں بھی اک حاجی ہوں"
میں بھی حاجی ہوں پھر
بھی بے نمازی ہوں
جب گیا میں مکہ مدینہ
سیلفی لے کے آیا ہوں

0
29
دستبردار ہونا پڑے گا آج یا کل
ہر شے اپنا سمجھ بیٹھا ہوں
یہ بھی میرا وہ بھی ہے میرا
ہم خود کے نہیں
غفلت میں ڈوبا ہوا لہراتا بدن
مادیت پرستی دل دل میں

36
پھنس گئے ایسے دلدل میں
اب باہر نکلنا مشکل ہے
دل میں اتنے آرزو ہے
سامنے ان کے رکھنا بہت مشکل ہے
یہ دل دل کی کہانی ہے
تیری بھی اور میری بھی

0
42
ان کے در پہ مسلسل جانا مجھے تو اچھا لگتا ہے
دل کی دھڑکن میں بسا لینا مجھے تو اچھا لگتا ہے
جب بھی ان کی یاد آتی ہے تڑپنا بہت مشکل ہے
بزم کو خیالوں میں سجا لینا مجھے تو اچھا لگتا ہے
دل ہی میں اسے کہہ دینا زرا خالی نظر بھی ادھر ڈالو
خوابوں میں اسکا آنا جانا مجھے تو اچھا لگتا ہے

0
61
کیا تمہیں تو لگتا ہے میں
خود ہی چلتا پھرتا ہوں
یہ تسلسل ہے قائم
اور یہ جھولا رواں ہے
اس میں ہر شے کشمکش میں ہے
یہ فلک چاند تارے

0
35
دل نے اِک رہ
ڈھونڈ لی جب وہ میرے
سامنے میں ان
کےسامنے تھا
اِک نظر وہ کرم کی تھی وہ میرے غمزدہ دل
کا ہمراز بنکر اُس راستے میں رہبر بن کر

0
30
حسن ہے تجھ میں
تیرے دلکش نظارے ۔۔۔۔۔
تیرے چشموں اور جھرنوں یہ
آبشاروں کی روانی ۔۔۔۔۔
تیرے اندر ہر شے میں ہے
قدرت کی نشانی ۔۔۔۔۔۔۔

42
تجھ سے دور رہ کر سکونِ دل نہ ملا
کس سے کروں میں گلا
خود اپنے سے بے خبر
لوگوں کے تیروں سے چھلنی
ہے قلب و جگر ۔۔۔۔۔۔۔
کوئی قرار نہیں بے قرار ہے دل میرا

0
29
ملے گی جن کو زندگی دوبارہ
ملے گا انکو ماہ رمضان کا نظارہ
پھر سے دوبارہ
ہو گیا ہم سے رخصت
آیگا پھر سے دوبارہ ماہِ رمضان ہمارا
اللہ کی رحمت برس رہی تھی ہر شے پے

0
32
اے غم زندگی سکھایا تو نے کیا کیا
جنم سے لے کر آج تک دکھایا
تو نے کیا کیا
وہ مالک ہے کُن کا وہی محافظ
وہ آزماتا گیا کھویا تو نے
کیا کیا پایا تو نے کیا کیا

0
32
رنج و الم کا ٹھکانہ ہے
چند لمحات تیرے
میرے حصے میں
یہ دارِ فانی ہے
کشمکش میں مبتلا
زندگی ۔۔۔۔۔۔

0
40
(الوداع)
سبٓدر شبیر
چرچا صبح و شام تیرا ہی تھا
اور وہ قسمت والے دعا گو تھے
قسمت والوں کی کھیل جن کو معلوم ہے
چاروں طرف شورِ گل تھا

0
52
وہ پہلی رات جب چاروں طرف اندھیرا ہوگا
وہ ہمنشیں بھی مٹی کے تنکے ڈال کر ہی
تنہا مجھے دو گز کے اندر رو رو کے توبہ۔۔۔۔
اپنے منزل پر اور دور جا کے
آپس میں باتیں کرتے جائیں گے
دو گز زمین ہونگے ۔۔۔۔۔۔

0
63
مدتوں بعد پھر ہم لوٹ آۓ ہیں
آرزو پھر وہی دل دل میں لاۓ ہیں
مانگتے ہیں جو وہ ہم سب کا حق ہی ہے
ظلم سہتے رہیں اور آزماۓ ہیں
ہم ہمیشہ نظر انداز ہو ہی گے
ہم تو اپنے ہے یا ہم بھی پراۓ ہیں

0
53
مدتوں بعد پھر ہم لوٹ آۓ ہیں
آرزو پھر وہی دل دل میں لاۓ ہیں
مانگتے ہیں جو وہ ہم سب کا حق ہی ہے
ظلم سہتے رہیں اور آزماۓ ہیں
ہم ہمیشہ نظر انداز ہو ہی گے
ہم تو اپنے ہے یا ہم بھی پراۓ ہیں

0
53
مدتوں بعد پھر ہم لوٹ آۓ ہیں
آرزو پھر وہی دل دل میں لاۓ ہیں
مانگتے ہیں جو وہ ہم سب کا حق ہی ہے
ظلم سہتے رہیں اور آزماۓ ہیں
ہم ہمیشہ نظر انداز ہو ہی گے
ہم تو اپنے ہے یا ہم بھی پراۓ ہیں

0
45
جب بھی دل ہمکلام ہوتا ہے
عشق کویوں سلام ہوتا ہے
ملتا ہے بس سکون دل مجھ کو
ورد لب جب وہ نام ہوتا ہے
آہ جب نکلی میرے دل سے بھی
لب خموشی میں کام ہوتا ہے

0
232
جنگ کیوں کر رہے ہو کیا
تمہیں یہ نفس کا غم ہے
تمہیں اس دین پے شک کیوں ہے
لوگوں کو میں مت بانٹو فرقوں میں
لوگوں کو جوڑو توڑو مت
اسلام حسن اخلاق کا درس دیتا ہے

0
49
دل سیاہ ہے کیا کرو
مل بھی جائے تو
کیا کرو
رہ کر ان کے سامنے
کیا کیا کہوں
کیا کیا سنو

0
67
اپنے داںٔرے حدود میں
رہا کرو اے سکون سے
یہ کیوں نفس نے تجھکو قید کیا
اپنے داںٔرے میں
یاد کر۔۔۔۔۔۔
جب ہم اور تم کہیں اور تھیں

0
40