حسن ہے تجھ میں
تیرے دلکش نظارے ۔۔۔۔۔
تیرے چشموں اور جھرنوں یہ
آبشاروں کی روانی ۔۔۔۔۔
تیرے اندر ہر شے میں ہے
قدرت کی نشانی ۔۔۔۔۔۔۔
چڑیوں کا چہچہانا صبحِ نو کا ترانا
یہ قدرت کا کرشمہ تجھ میں ہے
اور کیا کچھ نہیں ہے ۔۔۔۔۔۔۔
سر سبز سبزہ زاروں میں لپٹی
مہکتے گلابوں کی خوشبو۔۔۔۔۔۔
تو ہے مثلِ جنت تجھ میں وہ خوبیاں
مسکراتی ہوئی ندیاں۔۔۔۔۔
ہے چمن چمن میں خوشبو ہر طرف
تجھ میں ممتا ماں جیسا!
حسن و زینت سے بھری ہر شے
ولیوں درویشوں کا چمن چمن
ہر طرف سبز سونا برفیلی پہاڑوں
میں لپٹی حسین وادی ۔۔۔۔۔
ہر نعمت ہے تجھ میں
اللہ نے تجھ کو ولیوں کی نورانیت سے
سر شار و شاداب کیا ہے
تجھ میں یہ نورانی شادابی سلامت رہے
پھولوں کی خوشبو سے چمن چمن مہکتا رہیں
اے میرے ۔۔۔۔۔۔۔
تو ہمیشہ معطر رہے

51