Circle Image

Javed Aslam Khan

@jaslamkhan

تو جو چاہے تری نظروں سے گرا دے مجھ کو
تیرے بس میں نہیں کے دل سے بھُلا دے مجھ کو
لڑ کے طوفاں سے اتر تو گیا ہوں ساحل پر
اب کدھر جاؤں کوئی یے تو بتا دے مجھ کو
ہے خطا میری محبت پے یقیں رکھتا ہوں
اب تری مرضی ہے جو چاہے سزا دے مجھ کو

0
27
چلتے چلتے ہو گئ ہے شام اب
اے مِری منزل ٹھہر جا چل نہ اب
بس رضا رب کی دعا ماں کی رہے
کچھ زیادہ اور ہو مانگا تھا کب
قبر میں تنہا لٹا واپس گئے
بھائی ہمساےء اقارب اور سب

38
جہاں میں یے بھلا کیوں ہے
سُکوں کا انخلا کیوں ہے
تجھے کھوےء کٹے برسوں
مرے دل میں ملا کیوں ہے
سوئ ہے زندگی لیکن
حواس اپنا جگا کیوں ہے

60
فریبیوں کے بھنور سے نکل گئے ہوتے
جو ہاتھ آپ کا ہوتا سںبھل گیے ہو تے
شکوہِ بے حسی بے جان راستوں سے کیوں
حواس والو تم ہی بدل گئے ہوتے
مصیبتوں نے توازن بنارکھا ورنہ
کسی نشیب پے لازم پھسل گیے ہو تے

30
گھر میرا جگمگایا کرے
تو یوں ہی روز آیا کرے
چار دن کی تو ہو چاندنی
پھر اندھیرا ڈرایا کرے
میں بلندی کو چھوتا رہوں
تہمتیں وہ لگایا کرے

27