Circle Image

میاں حمزہ

@mianhamza02

اپنے دردوں کی کہانی لکھتے لکھتے تھک گیا
کیسے گزری زندگانی لکھتے لکھتے تھک گیا
عشق کی راہوں پہ چل کےجو ملی تجھ سے مجھے
رنج کی وہ جاودانی لکھتے لکھتے تھک گیا
کاش تم بھی دیکھ پاتے کہ میں تیرے عشق میں
کیسے اشکوں کی روانی لکھتے لکھتے تھک گیا

17
خیبر کو جیتنا ہے ضرورت علیؓ کی ہے
راہب کو پیٹنا ہے ضرورت علیؓ کی ہے
کیوں علم کی تلاش میں پھرتا یہاں وہاں
گر علم سیکھنا ہے ضرورت علیؓ کی ہے
ہجرت کے وقت ڈھونڈ رہے تھے نبیﷺ انہیں
بستر پہ لیٹنا ہے ضرورت علیؓ کی ہے

27
درد میرے دوا تو کر لیتے
جھوٹ ہی پر وفا تو کر لیتے
چھوڑنا چاہتےتھےمجھ کو بھی
عشق کیوں کچھ نیا تو کر لیتے
رستے یادوں کے ہیں ابھی باقی
اچھےسےسب جدا تو کر لیتے

15
*22 جمادی الثانی یومِ وصال خلیفۂ اول سیدنا صدیقِ اکبر رضی اللہ عنہ*
وہ آئے تھے جہاں میں محمد ﷺ کے واسطے
صدیقؓ پر ختم ہیں وفاؤں کے راستے
دکھلا دیا نبھا کے جو وعدہ وفاؤں کا
صدیقؓ کو سلام ہے چلتی ہواؤں کا
وہ آج کی طرح ہی ہمیشہ سے پاس تھے

25
درد میرے دوا تو کر لیتے
جھوٹ ہی پر وفا تو کر لیتے
چھوڑنا چاہتےتھےمجھ کو بھی
عشق کیوں کچھ نیا تو کر لیتے
رستے یادوں کے ہیں ابھی باقی
اچھےسےسب جدا تو کر لیتے

22
جہاں میں عصمتوں کے ہیں لٹیرے پھیلتے جاتے
وطن کی بیٹیوں کو ہے ضرورت پھر سے قاسمؒ کی
میاؔں حمزہ

18
جلد ہی دور تشنگی ہوگی
چارسو میرے روشنی ہوگی
میں مدینے کی اور جاؤں گا
پھول جیسی یہ زندگی ہوگی
اب کرم کی نظر ہو جائے گی
غم کی یہ رات آخری ہوگی

19
خوش آمدید 2021
یا رب تُو اس برس میں وہی کام مجھ سے لے
راضی جو تجھ کو رکھے گناہوں کے پتلے سے
میاؔں حمزہ

11
بس ایک ہی حسرت ہےباقی مرےدل میں اب
میں عشقِ محمد ﷺ میں قربان کِیا جاؤں
میاؔں حمزہ

14
#صلی_ﷲ_علی_حبیبہ_محمد_والہ_وسلم
یہاں نسبت نبیﷺ کیلئے بچھڑنا بھی نبیﷺ کیلئے
مری الفت نبیﷺ کیلئے ہے لڑنا بھی نبیﷺ کیلئے
مری حسرت نبیﷺہی ہیں مری رفعت نبیﷺ ہی ہیں
مرا گھٹنا نبیﷺ کیلئے ہے بڑھنا بھی نبیﷺ کیلئے
میں نے اسلاف سے سیکھا کہ دنیا میں جہاں بھی ہو

16
دل چاہتا ہے کیا تجھے کچھ بھی پتہ نہیں
مخلوق میں بڑا ہے تُو لیکن خدا نہیں
میاؔں حمزہ

15
صلی اﷲ علیہ وسلم
مسجدِ نبویﷺ پہ جاکے رو کے دیتے ہیں صدا
آج آقا ﷺ کے پیارے ہو کے دیتے ہیں صدا
سنتے ہیں کے ایک آنسو ہی بہا لے غم سبھی
ہم بھی چہرہ آنسوؤں سے دھو کے دیتے ہیں صدا
کچھ فکر ہوتی نہیں دنیا بھلے پھر جو کہے

21
نسبت بھی تو دیکھو کہ محمد ﷺ سے ہے میری
خوشحال ہوں ہر حال میں بس ان ﷺ کی بدولت
میاؔں حمزہ

2
21
حیوان کو سکون ملا ورنہ خوش یہاں
معصوم قتل کرکے تو انساں نہیں ہوتے
میاؔں حمزہ

0
12
بچے سکول جو گئے تھے لوٹ نا سکے
ماں انتظار میں رہی کے لال آئے گا
میاؔں حمزہ

0
14
جانے کیسا ملال ہے مجھ میں
زندگی اک سوال ہے مجھ میں
دردکو میں چھپاکے رکھتا ہوں
لوگ کہتے کمال ہے مجھ میں
میں کسی کو بُرا نہیں کہتا
خوبصورت مثال ہے مجھ میں

16
*من سبا نبیا فقتلوہ*
وہی ہوگا جو فرمایا ہے آقاﷺ نے جہاں والو
اٹھے آواز جو ناموس پر اسکو دبا ڈالو
*میاؔں حمزہ*

375
صلی ﷲ علیہ وسلم
مسجدِ نبویﷺ پہ جاکے رو کے دیتے ہیں صدا
آج آقا ﷺ کے پیارے ہو کے دیتے ہیں صدا
سنتے ہیں کے ایک آنسو ہی بہا لے غم سبھی
ہم بھی چہرہ آنسوؤں سے دھو کے دیتے ہیں صدا
کچھ فکر ہوتی نہیں دنیا بھلے پھر جو کہے

21
دل بھی دُکھائے اور سہے رنج بھی بہت
اک شعر لکھنے کو میں نے کیا کچھ نہیں کِیا
میاؔں حمزہ

13
ظلمت کدہ بنا ہے یہ جیون مرے لئے
مجھ کو چنا گیا ہے فقط درد کے لئے
میاؔں حمزہ

12
#صلی_ﷲ_علیہ_وسلم
یا نبی ﷺ اب مدینے بلا لیجئے
یا نبی ﷺ اس مہینے بلا لیجئے
دربدر میں بٹھکتا رہوں کب تلک
چل پڑے ہیں سفینے بلا لیجئے
ہو کرم کی نظر کے میسر ہوں اب

17
کسی نے دور سے ہم کو سدا دی تھی دغا کی تھی
مرا دل توڑ کر ہم کو سزا دی تھی دغا کی تھی
فقط دکھلا وے کی چاہت تھی مجھ کواب سمجھ آیا
لہو دے کر مجھے اپنا شفا دی تھی دغا کی تھی
مرے نغمات چھینے تھے مجھے بدنام کر کے جو
محبت کی نئی مجھ کو نوا دی تھی دغا کی تھی

33
جو روٹھ چکا یار منا رقص کریں ہم
اب ذات تُو اپنی بھی مٹا رقص کریں ہم
گر رب کو منانا ہے تو سجدے میں رہا کر
ہاں یار کی لیکن ہے رضا رقص کریں ہم
اک عرصےسےدکھوں کی ہےدلدل میں تُو پھنسا
ہو جائے ترا بھی تو بھلا رقص کریں ہم

33
بلاوے کے اشارے ہوں کبھی تو
مدینے کے نظارے ہوں کبھی تو
یہ اپنی عمر نعتیں لکھتے گزرے
تخیل میں اجالے ہوں کبھی تو
بہت عرصہ ہوا کھوئے ہوے ہیں
میسر اب کنارے ہوں کبھی تو

23
رونق یہ بہت جلد مٹانے کو ہے دنیا
وعدہ جو خدا کا ہے نبھانے کو ہے دنیا
وہ جا چکے ہیں لوگ خدا کے جو پیارے
یہ اب تو فقط آگ لگانے کو ہے دنیا
میں دیکھ رہا ہوں جو زمانے کے مناظر
اک زلزلہ بس جلد ہلانے کو ہے دنیا

18