Circle Image

Imran Khan

@Imranav

اس طرح بھی کبھی ہم خود کو سزا دیتے ہیں
نام لکھ کر تیرا دلدار مٹا دیتے ہیں

0
5
دل میں رہتے تو ٹھیک تھا لیکن، تم تو اب دماغ میں رہتے ہو
کرکے بےچین مجھ سے کہتے ہو، کیوں میاں اضطراب میں رہتے ہو
در بدر ہم بھٹکتے پھرتے ہیں، تیری چاہت میں، تیری الفت میں
کرکے برباد مجھ کو کہتے ہو، کیسے خانہ خراب سے رہتے ہو

0
14
دل میں رہتے تو ٹھیک تھا لیکن
تم تو اب دماغ میں رہتے ہو

0
17
دلبر میرے ہم راہ سے ہم راز ہو گۓ
ہم دم میرےایسے بنے ہم ساز ہو گۓ

0
13
جو ایک شخص ہمیں آئینہ دکھاتا ہے
کتنا ناداں ہے خود کو بھول جاتا ہے

0
13
زخم تو بھر گیا، پر یہ نشاں ہے باقی
عشق گو اب نہیں، درد نہاں ہے باقی

0
23
کیسا لگا ہے دل کو یہ آزار سراسر
ہم تو ہوۓ ہیں آپ کے بیمار سراسر

0
31
تم کو بھی آۓ گا 'مزہ' رفتہ رفتہ
عشق کی ہوگی انتہا رفتہ رفتہ

0
13
مجھ کو لگا کہ تجھ سے بہت دور آ چکا
دیکھا تو اب بھی میں تیرے دام نظر میں ہوں

0
14
یاد اتنا بھی نہ آۓ کوئ
شاد کرنا ہے، تو آۓ کوئ
شوق دیدار تو پورا کر لیں
آ گیا ہے تو نہ جائے کوئی

0
26
رخ کو چھپاۓ بیٹھے ہیں کچھ اس ادا سے وہ
جھرمٹ میں بادلوں کے چھپ جائے جیسے چاند

0
22
پیام ان کا اے میرے یارو!
نہ صبح آیا، نہ شام آیا

0
17
جان کی راحت کا ساماں کیجئے
دشمن جاں سے محبت کیجئے
دشمن جاں سے محبت کیجئے
عاشقو! سامان راحت کیجئے

0
19
آیا نیا یہ سال، پرانا چلا گیا
دستور ہے جہاں کا، جو آیا، چلا گیا
آمد پہ تیری جشن مناؤں میں کس طرح
وہ بھی تو تھا عزیز، جو آیا، چلا گیا
رہتا نہیں ہے کوئی بھی موسم سدا یہاں
سکھ آیا، دکھ گیا ہے، دکھ آیا، چلا گیا

0
11
ہونے کو حاتم ہو کوئ، پر تیرا ہمتا نہیں
دیکھ کر ان کی عطا کو، کوئ بھی جنچتا نہیں
ہاتھ خالی ان کے در سے کوئی بھی پھرتا نہیں
ان سے ملتا ہے سبھی کو، کیا انہیں ملتا نہیں
جس کو جو ملتا ہے، ملتا ہے اسی سرکار سے
ان کی رحمت کے میں قرباں، لا کوئی سنتا نہیں

0
9
تمہارے در پہ ہیں حاضر گدا غریب نواز
تمہاری شان کے قرباں شہا غریب نواز
تمہیں تو سنتے ہو سب کی سدا غریب نواز
تمہیں نہ دیں تو کسے دیں صدا غریب نواز
تمہاری ہی ہے حکومت تمام بھارت پر
تمہیں نبی نے یہ کی ہے عطا غریب نواز

0
16
غموں کا ہے سلسلہ مسلسل
خوشی نہ ٹھہری یہاں مسلسل
بدلتے موسم ہیں آتے جاتے
چمن میں میرے خزا مسلسل

0
14