Circle Image

ALIM ULLAH

@AliemUKhan

یہ دل رہگزر کارواں عشق ہے
تو محرومیوں کا مکاں عشق ہے
زمیں سے فلک کہکشاں سے پرے
جہاں نور گر ہے وہاں عشق ہے

0
24
اپنے اپنے سورج چاند ستارے ہوںگے
جن کو چاہیں گے سب لوگ ہمارے ہوںگے
رب نے ایسی دنیا ایک بنایٔ ہوگی
بچھڑے ہیں جو لوگ وہاں وہ سارے ہوںگے

0
57
صبح روشن اور سنہری شام بھی دیتا ہے وہ
درد دیتا ہے اگر آرام بھی دیتا ہے وہ
اپنے بندوں کو فقط وہ آزماتا ہی نہیں
جب کبھی کرنے لگوں تو تھام بھی لیتا ہے وہ

0
90
تھوڑی خشیاں درد ذیادہ رککھا ہے
ہمنے دل میں زخم کشادہ رککھا ہے
آنکھیں میری خواب ادھورے اسکے ہیں
ہمنے سب کچھ آدھا آدھا رککھا ہے

0
135
سلسلہ درد کا مسلسل ہے
ذندگی میں کہیں تو ہلچل ہے
ہے ادھوری سی ذات اپنی بھی
ذات میں اک خلا مکمل ہے

0
103
تمام عمر ہے گذری اندھیری غار کے ساتھ
نہ اب چراغ سے نسبت نہ نور نار کے ساتھ
ہے اسکی نرم کلامی کا یہ اسر کہ ابھی
وہ سنگ آج بھی لپٹے ہیں اس مزار کے ساتھ

0
162
ہم نے اک دن جام اٹھایا پینے کو
کیسے کیسے دل بہلا یا جینے کو
خوشیاں تو بس آنکھ مچولی کرتی تھیں
ہم نے دل پر درد اگایا جینے کو
ایک کفن ہے بستر ہے سب رشتے ہیں
مرنے پر سامان ہے آیا جینے کو

0
106
ُ غم سے دل کا رشتا کیسا اب کس غم کی باری ہے
اک چھوٹا سا دل ہے جس پر سب کی داوے داری ہے
جی کرتا ہے آج فضاؤں میں جا کر پر واذ کریں
آج خیالوں نے بادل پر اک تصویر اتا ری ہے

138
پہلے جیسی رشتوں میں وہ بات نہیں
چاہت کے لم ہوں میں بھی لو آت نہیں
ہر تتلی اب ماری ماری پھرتی ہے
رنگ برنگے پھول تو ہیں باغات نہیں
تم بھی کتنے بدلے بدلے لگتے ہو
جھوٹھی سچی باتیں ہیں جذبات نہیں

90
جیون کے تانے بانے میں
کچھ بھول ہوئی انجانے میں
اس دل پر دھوپ ہی دھوپ رہی
اک عمر ہی ساری بیت گئی
اپنوں کو اپنا بنانے میں
میں کون ہوں یے سمجھانے میں

0
79
جیون کے تانے بانے میں
کچھ بھول ہوئی انجانے میں
اس دل پر دھوپ ہی دھوپ رہی
اک عمر ہی ساری بیت گئی
اپنوں کو اپنا بنانے میں
میں کون ہوں یے سمجھانے میں

0
111