سِتارے بات کرتے ہیں
تو سارے بات کرتے ہیں
مَیں جب خاموش ہوتا ہوں
خسارے بات کرتے ہیں
اِشاروں کی زباں سمجھو
اِشارے بات کرتے ہیں
زمیں پر ہم نے دن کیسے
گزارے بات کرتے ہیں
اُڑیں تو پِھر ہواؤں سے
شرارے بات کرتے ہیں
سمندر جب نہیں کرتا
کِنارے بات کرتے ھیں
کہ بچوں کی کہانی میں
غبارے بات کرتے ہیں
تری تصویر میں جاناں
نظارے بات کرتے ہیں
تباہی پر مری مانی
یہ سارے بات کرتے ہیں

0
40