کرم اتنا کر اپنے بیمار پر
بُلا قبلِ رحلت درِ یار پر
تجھے دیکھنے کی طلب ہے بڑی
عیاں جلوہ کر مجھ خطا کار پر
وہ گلیاں، شہر، راستے دیکھوں میں
جہاں اُترا حق تیرے دلدار پر
ترے پاس یا رب کمی کچھ نہیں
بنا زندگی طرزِ ابرارﷺ پر
عطا عشق کا جذبہ کر وہ کہ میں
جہاں وار دوں ایک دیدار پر
یہ دنیا تو کیا اے خدایا مِرے
دل و جاں فدا میرے سرکار پر
مبارک مہینہ ہے زیدؔی پڑھو
درود آپ نبیوں کے سردار پر

0
29