ملے مصطفیٰ سے دہر کو اجالے
وہ ہستی میں اعلی بڑی شان والے
مثال ان کے پیدا نہ ہو گا کبھی بھی
وہ والا ہیں سب سے وہ سب سے نرالے
نبی کی عطا سے دہر کی ہے زینت
علیٰ درجے سارے نبی نے سنبھالے
جو جنت ہیں دیتے سدا عاصیوں کو
ہیں لال آمنہ کے حلیمہ کے پالے
یہ کوثر ہے چشمہ ملک مصطفیٰ کی
وہ میداں میں دیں گے ہمیں بھی پیالے
تلے ان کے قدموں وہ عرشِ بریں ہے
ہیں آقا سے سارے دہر کے اجالے
اے محمود ڈنکا نبی کا علی ہے
وہ سلطاں ہیں میرے بڑی شان والے

9