زندگی کیسی مسرت سے پور ہو
دکھ، مصیبت اور غم سے بھی دور ہو
جنم دن میرا منانے گھر پر رہوں
اہلیہ بچے سبھی رشتہ دار ہو
جب وطن سے خوب ہو لمبا فاصلہ
کیک پر پیغام لکھ دیتے یار ہو
بیت جاتے یاد کر کے لمحے رہیں
جو ملی چاہت بہت تو مسرور ہو
ہاتھ پھیلاؤں سوالی بن کر ابھی
شادماں، خرم، سلامت، بے فکر ہو
پیش ہو ناصر مبارکبادی غزل
موہ لینے مثل کوئی بھی شعر ہو

0
39