دکھاں دا ہر پاسے ویکھ کھلارا
اکھاں رو رو انّیاں ہوئیاں
فیر میں اکھاں منگن لئی ٹُریا
سوچ آئی ہنس کے بہہ گیا میں
افری کی لبھدا پھرناں ہیں اڑیا

0
25