چراغاں ایسے ہی ظلمت نہیں ہوتی
یہ شاہِ آسماں کی کن ادائی ہے
نہ روکو آج مجھ کو حظ اٹھانے دو
مِرے گھر میں خدا کی رحمت آئی ہے

0
2