خوب پیاری سی خوبصورت ہیں آنکھیں
مولا کی بخشش، دین و نعمت ہیں آنکھیں
صلب گر ہو معلوم بھی قدر تب ہو
بینائی سے محروم عبرت ہیں آنکھیں
سوچنا، سننا صاف رکھیں ہمیشہ
روح پاکیزہ ہو بصیرت ہیں آنکھیں
دیکھنا جس کا حکم رب کے مطابق
جان اس پر قربان، رحمت ہیں آنکھیں
خاص راتوں میں ہو عبادت کی عادت
جاگے شب بھر پاتی فضیلت ہیں آنکھیں
ہو خراجِ تحسین بھی نام ان کے
پردہ میں رہتی جو باعصمت ہیں آنکھیں
بینا تجھ کو ناصؔر خدا نے بنایا
شکر ہے مالک کا سلامت ہیں آنکھیں

0
25