اک جزیرہ اور سمندر کوبکو پھیلا ہوا
روح پاکیزہ ہو چاہے تن بدن میلا ہوا
ایسا سناٹا ہو جس میں دھڑکنیں چلّا اٹھیں
یوں لگے جیسے ابھی تک میں نہیں پیدا ہوا

0
40