تاریخ میلاد کی دلوں میں بسی ہوئی ہے
محفل درود کی ہر سو سجی ہوئی ہے
ہیں رونقیں یہاں جن کے دم سے جلوہ گر
اس ماہ مبارک کی تشریف آوری ہوئی ہے

0
37