مجھے تم سے محبت ہو چکی تھی
تمہیں مجھ سے عداوت ہو چکی تھی
یہ قصہ جب مکمل ہو چکا تو
تری جانب خیانت ہو چکی تھی
یہ دل ہے چیخ کر رویا بہت سا
خبر تک سب شرارت ہو چکی تھی
یہاں احساسِ عشق و چاہ جب تھا
وہاں دھوکہ، خباثت ہو چکی تھی

0
6