ورد لب ہے یا محمد مصطفی شام و سحر
رہتا ہے لب پر مرے صلے علیٰ شام و سحر
ہیچ رکھ اپنی نظر میں دنیا کی رنگینیاں
ہیں تصور میں جو وہ جلوہ نما شام و سحر
خواب میں مجھ کو مرا محبوب دکھلا دے خدا
کر رہا ہوں میں یہ رب سے التجا شام و سحر
بخشوائیں گے مجھے رب سے مرے پیارے نبی
مانگتا ہوں میں شفاعت کی دعا شام و سحر
الفتِ آلِ نبی ہر دم مرے دل میں رہے
یاد رکھ عتیق درس کربلا شام و سحر

2
167

محشر میں ہو نصیب شفاعت رسول کی
ہر دم مری زباں پہ ہو مدحت رسول کی
گرتا نہیں زمانے کے شاہوں کے سامنے
جس دل میں بس رہی ہو محبت رسول کی
صدیق بن گیا کوئی فاروق بن گیا
حاصل رہی ہے جن کو بھی قربت رسول کی
میں اسوۂ رسول پہ چلتا رہوں مدام
ہر دم مرے عمل میں ہو سنت رسول کی
نعتیں عتیق اپنی زباں پر سجا کے رکھ
اے کاش ہو تجھے بھی زیارت رسول کی

0
نعت پاک
ورد لب ہے یا محمد مصطفی شام و سحر
رہتا ہے لب پر مرے صلے علیٰ شام و سحر
ہیچ رکھ اپنی نظر میں دنیا کی رنگینیاں
ہیں تصور میں جو وہ جلوہ نما شام و سحر
خواب میں مجھ کو مرا محبوب دکھلا دے خدا
کر رہا ہوں میں یہ رب سے التجا شام و سحر
بخشوائیں گے مجھے رب سے مرے پیارے نبی
مانگتا ہوں میں شفاعت کی دعا شام و سحر
الفتِ آلِ نبی ہر دم مرے دل میں رہے
یاد رکھ عتیق درس کربلا شام و سحر

0