چاہنے والے ستا کر نہیں ملتے
ہو کہاں کیوں آ کر نہیں ملتے
تعلق ترازو میں نہ تولنا افری
اپنوں سے تمغے سجا کر نہیں ملتے

0
14