میلا کہا تھا اس کونہانے کے بعد بھی
رونے لگا وہ باتیں سنانے کے بعد بھی
چائے پکوڑے رول اڑانے کے بعد بھی
وہ روٹھتا رہا ہے منانے کے بعد بھی
چہرہ ہے ہونق سا لگے بے وقوف سا
دھوکا ہے کھایا اس کے بدلنے کے بعد بھی
جانے لگا تو بولا کہ یہ بات یاد رکھ
میں رس ملائی کھاؤں گا آنے کے بعد بھی
اک ران ہاتھ میں جو لی فورن ہی بولا وہ
تو دیکھتا رہ جائے گا پانے کے بعد بھی
بریانی تکہ قورمہ چکن کبا ب تھے
بھوکا دکھائی دیتا ہے کھانے کے بعد بھی
مارا تھا بار بار اسے پھینک کے گلاس
ہر بار بچا ہے وہ نشانے کے بعد بھی
گلے میں ریزگاری تھی بچوں کے واسطے
وہ بھی نکالی جیب چرانے کے بعد بھی
حد ہے کہ جیب ڈھیلی نہ اس کی کبھی ہوئی
اک پان تک ملا نہ زمانے کے بعد بھی
ٹافی دلا کے بچوں کو کہنے لگا سنو
کتنی دلاؤں چیز دلانے کے بعد بھی
میں نے بھی کہہ دیا اسے سب کچھ کھلا دیا
کیوں اور میں پکاؤں پکانے کے بعد بھی

18