دکھ خزانہ ملا ہے اپنو سے
اس کو یوں رائیگاں نہ جانے دے
اپنے آنسو سنبھال کر جاناں
غم ہنسی میں مجھے چھپانے دے
راجہ حارث دھنیال

0
57