ہر صبح نیا درد جگاتے ہو تم
ہر شام نیا دیپ جلاتے ہو تم
جو راز ہیں پنہاں دنیا کی نظر سے
رچناوں کی صورت میں سناتے ہو تم

0
20