الفت نبیؐ سے کرنا ہمارا شعار ہے
اللہ کے راستے کے لئے جاں نثار ہے
سن لی دعا مدینہ پہنچنے کی رب نے ہے
یہ تو دلیلِ رحمتِ پروردگار ہے
آنکھیں ترس رہی ہیں زیارت کے واسطے
چھایا بھی سبز روضہ کا ہی جو خمار ہے
نذرانہ پیش کر رہے سارے درود کا
سب پُر سرور سے ہیں، سماں پُر بہار ہے
پروانہ وار عشق کا ناصؔر ثبوت ہے
دعویٰ محمدیؐ ابھی تک پائدار ہے

0
29