اس شمع فروزاں کا پروانہ ہوئے ہم
اسباب کی دنیا سے بیگانہ ہوئے ہم
دنیا کے لیے کچھ بھی نہ ہوں اپنی نظر میں
تسبیح سماوات کا اک دانہ ہوئے ہم

0
64