مجھے ایسی محبت چاہیے ہے
جہاں گر درد ہو، درمان بھی ہو
جہاں رشتوں کی کچھ پہچان بھی ہو
مرے آنسو کسی کے لب پہ ٹپکیں
مری خوشیوں سے چہرہ کوئی چمکے
مرے خوابوں میں ہو جس کا بسیرا
مری راتوں میں میرے ساتھ جاگے
مرے کاندھے پہ جب بھی سر کو رکھے
مری ساری تھکاوٹ دور کر دے
مجھے ایسی محبت چاہیے ہے
تمہیں لگتا ہے تم یہ کر سکو گے؟

0
14