دل کی دھڑکن ہی زندگانی ہے
زندہ ہونے کی یہ نشانی ہے
رحمِ مادر میں بھی سنائی دے
یہ نہ دھڑکے تو موت آنی ہے

0
54