حصارِ یاد کی تابندگی ترے قرباں
عطا ہوئی تری قربت سے لذتِ ہجراں
صاعقہ علی نوری

0