کہاں ہم کو بھلا اب درد ہوتا ہے
ہمارا درد ہی ہم درد ہوتا ہے
نشانی اہلِ الفت کی بتاؤں کیا
زباں خاموش چہرہ زرد ہوتا ہے
محبت کس کو کہتے ہیں کسے پوچھوں
ہوس کی کھوج میں ہر فرد ہوتا ہے
شکستہ دل نہیں ہے کام یہ تیرا
وفا کرنا بڑا پُر درد ہوتا ہے
وہ چپ رہتے ہیں باصر شرم کے مارے
کہا کس نے کہ لہجہ سرد ہوتا ہے

3