عقل و دانِش کا دم نِکل جاتا ہے
آنکھوں کو کچھ نظر نہیں آتا ہے
پھیکی پڑ جاتیں ہیں سب تدبیریں
جب رنگ مقدر اپنا دِکھلاتا ہے

0
4