سونا سونا جگ ہو جائے یاد سجن کی آئی ہے
روپ پیا کا من کو بھائے یاد سجن کی آئی ہے
موری بتیا بوجھے متوا بیری جگت نا کان دھرے
مورے بدن ما روگ سمائے یاد سجن کی آئی ہے
آکے درگت دیکھلے سجنا پل پل تورے نام جپے
کہکے جیرا جان بھی جائے یاد سجن کی آئی ہے
سکھ نا پائے تڑپے منوا کون سنے موری پبتا
چرکا کا سے جا کے دِکھائے یاد سجن کی آئی ہے
میٹھے میٹھے بول سہاون بھیس پیا کے من موہے
درشن کو نینا ترسائے یاد سجن کی آئی ہے
نین سے برسے نیر تصدق راس نا آئے گھر آنگن
موہے منوا چین نہ پائے یاد سجن کی آئی ہے

0
2