رخِ مکہ مجھے بھی جانا ہے
سر یہ کعبہ میں ہی جھکا نا ہے
خالی ہے میری دامنِ قسمت
رحمتوں سے اسے بھرانا ہے
آس ہے روزۂ نبی دیکھو ں
مکہ جانا تو بس بہانا ہے
جاکے خیر البشر کے روزے پر
نغمہ ان کا ہی گنگنانا ہے
میں ہوں پیاسا نہ جانے کب سے ہی
خود کو زم زم مجھے پلانا ہے
ان پہ ہردم درود پڑھ یونس
گر مقدر تجھے جگانا ہے

0
8