یہ غم نہیں ہیں اثاثہ ہیں میرے دل کا
یہ شعر نہیں خلاصہ ہیں میرے دل کا
از ساگر حیدر عباسی

5