چال اپنا رہے پرانی کیوں
کر رہے ہو غلط بیانی کیوں
غیر سے پیار اپنوں سے نفرت
امتیازی سلوک جانی کیوں
گندی عادت گئی نہیں اب تک
بھولتے جارہے نشانی کیوں
چھوٹے گر کرتے ہیں بری حرکت
تیکھی باتیں مگر سنانی کیوں
قیمتی وقت لوٹ نا آئیں
کرنی برباد بھی جوانی کیوں
کام ہو ٹھوس ہوش میں رہتے
مفت کی کچھ بلائیں لانی کیوں
خیر خواہی کے جزبہ ہو ناصؔر
بد دعائیں کسی کی کھانی کیوں

0
27