قطعہ

13 جنوری 2018

ذہن و دل کے صحن میں شوقِ نظر میں چاندنی
ہر گلی ہر موڑ پہ ہر رہ گذر میں چاندنی
کاکلِ شب ہم کو تیری تیرگی کا غم نہیں
ہم نے پہلے سے بلا رکھا ہے گھر میں چاندنی
اشعار کی تقطیع
تبصرے