غزل

12 جنوری 2018

میرے ہر اک سفر میں تم ساتھ ساتھ چلنا
جیون کی رہ گذر میں تم ساتھ ساتھ چلنا
تم مجھ سے نہ تعلق جاناں کبھی بدلنا
چاہت کی اس ڈگر میں تم ساتھ ساتھ چلنا
ہر لمحہ سنگ تم کو اپنے ہی دیکھنا یوں
میری ہر اک اگر میں تم ساتھ ساتھ چلنا
اشعار کی تقطیع
تبصرے