رباعی!

12 اکتوبر 2017

بے زباں کو زباں نہیں ملتی
بے کسوں کو اماں نہیں ملتی
یوں تو ہر شے ملی زمانے میں
پر مجھے میری ماں نہیں ملتی
اشعار کی تقطیع
تبصرے