اے دل

17 جولائی 2017

تیری ہی اطاعت میں یہ غم سارے ملے ہیں
اے دل تری شاہی کے یہ انداز عجب ہیں
ناسور ہیں یادوں کے کبھی زخمی جگر ہے
آنکھیں ہیں یہ پیاسی کبھی تشنہ یہ لب ہیں
اشعار کی تقطیع
تبصرے