میری شاعری

آپ کی شائع شدہ شاعری

اس سیکشن میں اپنی شاعری کیسے شائع کریں؟

#موزوں شعر

27 جون 2015


مفعول فاعلاتن مفعول فاعلاتن
ہر عکس آئینے میں اک دن اتار آیا
اور خود بے عکس سی ہستی میں گزار آیا
#موزوں تری یاد

27 جون 2015


اپنے ساتھ اشکوں کا طوفاں لائی
ہمیں تو جب بھی تری یاد آئی
#موزوں غزل

26 جون 2015


جو آئینہ رو ،بے سہارا پھرتا ہے
ہر عکس اندر سے اتارا پھرتا ہے
کیوں میری ہی آوارگی پہ حرفِ طعن
آوارہ خود یہ شہر سارا پھرتا ہے
مزید دکھائیں
#موزوں خط

26 جون 2015


تُو جب بھی جلائے گا یہ خط مرے
اک اک حرف میں ہم نظر آئیں گے
#موزوں سپنے

26 جون 2015


یہ کون میری آنکھوں میں سپنے بسا گیا
جینے کی مجھ کو جیسے دُعا کوئی دے گیا
#موزوں 1

26 جون 2015


ہم غلامان مصطفیٰ ہیں زید
ہم کبھی موت سے نہیں ڈرتے
#موزوں شبِ معراج

25 جون 2015


ہر اوج ہے پستی میں فرو تر شبِ معراج
ہر عجز بلندی میں ہے بر تر شبِ معراج
ہر دائرۂ عالمِ امکاں ہوا مبہوط
ہے اس کے مقد در میں یہ محور شبِ معراج
مزید دکھائیں
#موزوں اشعار

25 جون 2015


وہ پگڑیوں کو جو سجائے آتے ہیں
آنچل کسی کا یہ سِلائے آتے ہیں
حرمت کا معنٰی وہ کیا بتائیں گے
آنگن میں خود لڑکی نچائے آتے ہیں
#موزوں ضبط کا موسم

25 جون 2015


انتہا کر تُو ہر اک اپنے ستم کی مجھ پر
کہ مرے ضبط کا موسم ابھی بدلا نہیں ہے
#موزوں شکوۂ یار

25 جون 2015


وہ تو آئے گی وقت پر اپنے
مرگ کی چاہ ہے مریں کیسے
ہر ستم ہنس کے سہہ لیا ہم نے
اب کسی بات سے ڈریں کیسے
#موزوں کھلونا

24 جون 2015


جب بھی چاہے وہ توڑ دیتا ہے
دل کھلونا مرا سمجھتا ہے
#موزوں کھوٹی قسمت

24 جون 2015


ہرنی سمجھا تھا جسے وہ کھوتی نکلی
دیکھو قسمت میری کیسی کھوٹی نکلی
وہ سمجھتی تھی حسن کی دیوی خود کو
رو برو آئی تو کالا موتی نکلی
مزید دکھائیں
#موزوں پیغام

23 جون 2015


مرے مولا مجھے وہ دن دکھائیں
کہ آقا کی ملیں ہر دم دعائیں
اسی کا پیارپائیں زندگی بھر
سبھی اس نور میں ہی ڈوب جائیں
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

23 جون 2015


موسم اداس تھا ہی دل بھی دکھا ہوا تھا
آنکھوں میں اک سمندر کب سے چھپا ہوا تھا
جب سحرِعشق سے نکلےتو بچا کچھا دل
کچھ کچھ جلا ہوا تھا کچھ کچھ بجھا ہوا تھا
مزید دکھائیں
#موزوں شکوۂ یار

23 جون 2015


شکوۂ یار ہم کریں کیسے
زخم سینے کا ہم بھریں کیسے
مہرباں ہوگئے ہو غیروں پر
بات ہے سچ مگر کریں کیسے
#موزوں کاش

22 جون 2015


میرے آقا کی محبت کاش ہو میرا نصیب
اور میرا پیشوا ہر گام ہو میرا حبیب
جب تری مسکان میری ذات کا محور بنے
لائقِ نعمت بنوں تو ہو خدا میرا مجیب
مزید دکھائیں
#موزوں ساتھی

22 جون 2015


وقتِ بگل دشمن صف سے نکلا
جس کو سمجھتے تھے اپنا سا تھی
#موزوں شعر

22 جون 2015


درویشی کے انداز نرالے دیکھے
زلفیں بکھری پاؤں میں چھالے دیکھے