میری شاعری

آپ کی شائع شدہ شاعری

اس سیکشن میں اپنی شاعری کیسے شائع کریں؟

#موزوں چائے اور اشعار

21 جولائی 2017


سوچا یہ پرسوں ہے اتوار
ابھی یہ دل ہونے لگا بیزار
باورچی خانہ میں جاکر ابھی
اپنے لئے چائے کروں تیار
مزید دکھائیں
#موزوں مکمل کر دے

21 جولائی 2017


روح کی تشنگی نا اور بڑھا اے جاناں!
وصل کے دیپ جلا اور مکمل کر دے
اپنی محفل میں تری راہ تکے بیٹھا ہوں
آ مری بزم میں آ اور مکمل کر دے
#موزوں اشعار

21 جولائی 2017


روح کی تشنگی نا اور بڑھا اے جاناں!
وصل کے دیپ جلا اور مکمل کر دے
اپنی محفل میں تری راہ تکے بیٹھا ہوں
آ مری بزم میں آ اور مکمل کر دے
#موزوں دو اشعار

21 جولائی 2017


روح کی تشنگی نا اور بڑھا اے جاناں!
وصل کے دیپ جلا اور مکمل کر دے
اپنی محفل میں تری راہ تکے بیٹھا ہوں
آ مری بزم میں آ اور مکمل کر دے
#موزوں دو اشعار

21 جولائی 2017


دل میں اک آگ ہے یہ آگ بجھاؤں کیسے
اپنے جذبات کو الفاظ میں ڈھالوں کیسے
تیری یادیں بھی ، تو سرشام چلی آتی ہیں
تیری یادوں کو مرے یار نکالوں کیسے
#موزوں حقِ وراثت

21 جولائی 2017


بے غرض جان کر وہ حقدار کا حق دباتے ہیں
جو بے لگام خواہشوں کے بھنور پھنس جاتے ہیں
آہ معزوروں کی یکدم پہنچ جاتی ہے فلک پر
ایسے بہن بھائی اکثر آخرت بری پاتے ہیں
مزید دکھائیں
#موزوں کرپشن کا تابوت

20 جولائی 2017


اٹھے گا کرپشن کا یہ تابوت عدالت سے
اب تم چلے ہی جاؤ یہاں سے تو شرافت سے
جب اٹھے گا پردہ اس نکلی سی شرافت سے
اٹھا نا سکو گے یہ سر تم تو ندامت سے
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

20 جولائی 2017


آنکھ سے آنکھ ملائے تو غزل ہوتی ہے
بجلیاں دل پہ گرائے تو غزل ہوتی ہے
جب ستاروں سے بھری رات ہو تنہائی ہو
چاند آغوش میں آئے تو غزل ہوتی ہے
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

20 جولائی 2017


یہ کیسا ظلم ڈھایا جا رہا ہے
مجھے کیوں آزمایا جا رہا ہے
غریبی ہو گیا جس کا مقدر
اسے در سے بھگا یا جا رہا ہے
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

20 جولائی 2017


ہر کوئی بے وفا نہیں ہوتا
دوستی میں دغا نہیں ہوتا
منصفِ وقت کی عدالت میں
فیصلہ حق نما نہیں ہوتا
مزید دکھائیں
#موزوں زینہِ مژگاں

19 جولائی 2017


یقیں ہے جب بھی مروں گا خدا کی آئی سے
زمانہ یاد کرے گا مجھے بھلائی سے
یہ کوئی کھیل نہیں امتزاج رنگوں کا
دھنک بنی ہے کسی کے کفِ حنائی سے
مزید دکھائیں
#موزوں فقیرِ نجف

19 جولائی 2017


میں علی کا بندہ ہوں حیدری
ہے زباں پہ نعرۂِ حیدری
ہے نیام میں تیرے ذوالفقار
ہے عدو کی سینوں میں کھلبلی
مزید دکھائیں
#موزوں دھوکے پہ دھوکا

19 جولائی 2017


اچھے عمل کی تکرار ہو کیسے
درکار نہیں رشتے دار ایسے
تھک گیا ہوں دھوکے پہ دھوکہ کھاتے
انجام سے سبھی ڈر نہیں پاتے
#موزوں سخنِ امیر

19 جولائی 2017


فعولن فعولن فعولن فعولن
ہو لمسِ خدا جس پہ محضر اتارو
۔
ارے رخ سے میرے یہ شہپر اتارو
مزید دکھائیں
#موزوں یاد رکھنا

19 جولائی 2017


تمہاری خاطر میں مر بھی سکتا ہوں یاد رکھنا
میں یہ حقیقت میں کر بھی سکتا ہوں یاد رکھنا
بھڑکتی آتش میں تپتے شعلوں سے میری جاناں
تمہاری خاطر گزر بھی سکتا ہوں یاد رکھنا
مزید دکھائیں
#موزوں کہاں ہے زندگی

18 جولائی 2017


لگتا ہے یوں یہ کوئی وہم و گماں ہے زندگی
اِس جہاں میں انساں کا تو امتحاں ہے زندگی
جلوہ گر ہے زندگی تو کتنے ہی انداز میں
قہقہے ہیں تو کہیں آہ و فغاں ہے زندگی
مزید دکھائیں
#موزوں اردو اساتذہ کے ہفتہ وار فی البدیہ مشاعرے رنگ محل کا پندرہواں جام

18 جولائی 2017


مرے ہمدم مرے مونس مرے یاور چلے آنا
کھلا ہے دل کا دروازہ مرے دلبر چلے آنا
تمہارے دم سے روشن ہے دلِ ویراں یہ بس اپنا
ہمارے دل کی دنیا کے مہِ انور چلے آنا
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

18 جولائی 2017


انسانوں میں کیوں انس او محبت کی کمی ہے
جو بات نفی کی ہے وہی دل میں جمی ہے
پہنی یے قبا بغض او عداوت کی سبھی نے
فطرت میں تعصب ہے نگاہوں میں کجی ہے
مزید دکھائیں