میری شاعری

آپ کی شائع شدہ شاعری

اس سیکشن میں اپنی شاعری کیسے شائع کریں؟

#موزوں سسپنے کا دفاع

22 ستمبر 2017


یہ سپنا حقیقت بڑوں نے بنایا
بزرگوں سے اپنے وفاکر رہے ہیں
کروڑوں ہی جانیں لٹا کر یہ پاہا
وہ جانیں ہم اب بھی فدا کر رہے ہیں
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

22 ستمبر 2017


آنکھ میں نصب کیے باب میں کب آتا ہے
وہ کسی لمحہِ نایاب میں کب آتا ہے
ہاں مری سوچ کا محور تو وہی ہے لیکن
وہ مرے حلقہِ احباب میں کب آتا ہے
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

22 ستمبر 2017


آنکھوں کی واردات سے لازم ہے احتیاط
دل میں تجاوزات سے لازم ہے احتیاط
بڑھنے لگیں نہ جسم میں سرطان کی طرح
چاہت کی باقیات سے لازم ہے احتیاط
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

22 ستمبر 2017


آئینہ ان کو دکھایا تو برا مان گئے
حق سے واقف جو کرایا تو برا مان گئے
دل دکھاتے تھے سدا وہ تو ہمارا لیکن
ہم نے اک بار دکھایا تو برا مان گئے
مزید دکھائیں
#موزوں مول بڑھ نہ جائیں

21 ستمبر 2017


خود رو پودے اب مرجھانے لگے دیکھا دیکھی
روندوائیں نہ اس طرح سے سنڈی لگی کھیتی
پکنے دو زرا اناج تب کوالٹی پرکھو
مول یوں بڑھ نہ جائیں گر کاٹی واڈی چھیتی
#موزوں میری ایک غزل کے دو اشعار

21 ستمبر 2017


آپ چاہیں تو کیا نہیں ہو گا
ذرہ اے خاک ہم نشین ہو گا
میری قسمت کا تارہ چمکے گا
میرے پہلو میں مہ جبیں ہو گا
#موزوں قطعہ

21 ستمبر 2017


کسی کونے میں جگہ دے دینا
مجھ کو مرنے کی سزا دے دینا
مری تربت پہ چلے آنا تم
اور جینے کی وجہ دے دینا
#موزوں نشانِ راہ

21 ستمبر 2017


یہ وقت حزن کیسا امت پہ آ گیا ہے
مایوسیوں کا سایہ کیوں ہم پہ چھا گیا ہے
شکوہ جفا کا ہم سے کرتی ہے ساری دنیا
ان کا بھروسہ ہم پہ شاید چلا گیا ہے
مزید دکھائیں
#موزوں عشق

21 ستمبر 2017


جو بھی اب آوے ہے وہ پھر سے چلا جاوے ہے
میرا دل یونہی جدائی میں دُکھا جاوے ہے
ایسے بل کھاتی ہوئ چلے ہے ناگن سی
میرا ایکدم سے ہی ہوش اڑا جاوے ہے
مزید دکھائیں
#موزوں نظم

21 ستمبر 2017


دستِ صباۓ شفقت
شاخوں پہ پھیر دوں میں
دل چاہتا ہے میرا
اِک شب قمَر کی صورت
مزید دکھائیں
#موزوں نظم

21 ستمبر 2017


دستِ صباۓ شفقت
شاخوں پہ پھیر دوں میں
دل چاہتا ہے میرا
اِک شب مہر کی صورت
مزید دکھائیں
#موزوں قطعہ

21 ستمبر 2017


شبِ فرقت میں رہتی ہیں یہ آنکھیں نم وجہ تم ہو
مری دیوانگی کی اے مرے ہمدم وجہ تم ہو
مسلسل خواہشِ دیدار میں جاگا ہوں راتوں کو
عیاں آنکھوں سے ہے میری جو درد و غم وجہ تم ہو
#موزوں منزلیں تو پا گیا

21 ستمبر 2017


منزلیں تو پا گیا میں محوِ سفر میں ہوں
پا گیا آرام تو میں پسینہ تر میں ہوں
تو جہاں بھی ہے مرے عکس میں تو شاد ہے
دیکھ مجھ کو زرا میں عمل خیر و شر میں ہوں
#موزوں نور جہاں شکریہ ترا

20 ستمبر 2017


ساز و آواز میں تری کوک دل ربا
گونج ترے نغموں کی قائم رہے سدا
سوئی ہوئی قوم کے جزبے دیئے جگا
ہر فردِ ملت کو مجاہد بنا دیا
مزید دکھائیں
#موزوں بیٹیاں

20 ستمبر 2017


بیٹیاں تو خدا کی رحمت ہیں
کون کہتا ہے یہ تو زحمت ہیں
رزق اپنا یہ ساتھ لاتی ہیں
باپ کے گھر کا کب یہ کھاتی ہیں
مزید دکھائیں
#موزوں مجھ کو فرزانگی مل گئی

20 ستمبر 2017


علم کی روشنی مل گئی
مجھ کو فرزانگی مل گئی
کچھ تو کرنے سوالات ہیں
بے وفا جو کبھی مل گئی
مزید دکھائیں
#موزوں غزل

20 ستمبر 2017


ہمیں جو لوگ دن بھر جانچتے ہیں
چلو ان کا کریکٹر جانچتے ہیں
ہمارے ضبط کی حد ہے کہاں تک
لگا کر زخم دل پر جانچتے ہیں
مزید دکھائیں
#موزوں اصلاحی کلام

20 ستمبر 2017


یہی تو وقت ہے ہم سب کے مل کے ساتھ چلنے کا
عدو نے دے دیا سگنل مسلماں کو کچلنے کا
یہ برما میں جو چھائی ہے گھٹا ظلمت کی ہر جانب
دعاؤں سے بھی لو کچھ کام اس غم سے نکلنے کا
مزید دکھائیں